Wednesday, Apr 24th

Last update12:39:09 AM GMT

سارک فلم فیسٹول میں پاکستان کی جیت

altسوموار۔ 28 مئی2012

گزشتہ ہفتے سارک رکن ملک سری لنکا کے دار الحکومت کولمبو میں منعقد ہونے والے سارک فلم فیسٹول میں پاکستان کی فلموں کو بھرپور پذیرائی حاصل ہوئی اور پاکستان کے لئے پہلا آسکر ایوارڈ جیتنے والی دستاویزی فلم سیونگ فیس نے سارک فلم فیسٹول میں بھی بہترین دستاویزی فلم (ڈاکیومینٹری) کا اعزاز اپنے نام کر لیا۔ واضح رہے کہ یہ پہلا موقع ہے کہ سارک فلم فیسٹول میں کسی پاکستانی فلم نے کسی بھی نوعیت کا کوئی بھی اعزاز اپنے نام کیا ہو۔ایسوسی ایٹ پریس آف پاکستان کے مطابق کولمبو میں منعقدہ سارک فلم فیسٹیول میں پاکستان کی جانب سے دو فیچر فلمیں، نوجوان خاتون ہدائتکار مہرین جبار کی فلم ”رام چند پاکستانی“ اور منجھے ہوئے ہدائتکار شعیب منصور کی فلم ”بول“کے علاوہ ایک دستاویزی فلم”سیونگ فیس“ مقابلے کے لئے بھیجی گئی تھی۔ شرمین عبید چنائے کی فلم ”سیونگ فیس“ کوفیسٹیول کی بہترین دستاویزی فلم قرار دیا گیا ہے جبکہ فیچر فلم ”رام چند پاکستانی“سلور میڈل جیتنے میں کامیاب رہی۔ علاوہ ازیں پاکستان کے دو فنکاروں فلم بول کے لئے منظر صہبائی اور فلم رام چند پاکستانی لے لئے راشد فاروقی کو بہترین ادا کار کے اعزازات سے بھی نوازا گیا۔  پاکستان کے لئے یہ ایوارڈز حاصل کرنا اس لئے بھی اعزاز کی بات ہے کہ فیسٹیول میں سارک کے تمام رکن ممالک کی فلموں کو مقابلے کے لئے پیش کیا گیا تھا۔ ان ممالک میں بھارت جیسا بڑا ملک بھی موجود تھا جہاں کی فلم انڈسٹری ہالی ووڈ کے بعد سب سے بڑی انڈسٹری تصور کی جاتی ہے ۔اس کی موجودگی میں پاکستانی فلموں کا ایوارڈ جیتنا غیرمعمولی کامیابی ہے۔تحریر، بلال حسین از اسلام آباد

Joomla Templates and Joomla Extensions by ZooTemplate.Com