Monday, Jul 15th

Last update12:39:09 AM GMT

بزنس مین پاکستانی کا سامان ضبط

روم۔ 16 نومبر 2012 ۔۔۔۔ اٹلی کے شہر تریویزو میں ہفتہ وار لگنے والی مارکیٹ میں ایک بزنس مین پاکستانی کا سامان ضبط کرلیا گیا ہے ۔ اس پاکستانی کی عمر 30 سال ہے اور یہ اٹلی میں مصنوعی زیورات اور ہینڈی میڈ سامان پاکستان اور ایشیا سے امپورٹ کرتے ہوئے فروخت کرتا تھا ۔ اٹلی کی فنانس پولیس نے چھاپہ مارتے ہوئے پاکستانی کے اسٹال سے 12 ہزار مصنوعات ضبط کرلی ہیں ۔ پولیس نے بتایا کہ یہ سامان ایشیا سے آیا ہے اور اس سامان پر کوئی مہر وغیرہ نہیں ہے ۔ پروڈکٹس کی ترکیب، اس شامل مٹیریل اور انکی کوئی دوسری شناخت درج نہیں ہے ، جس سے یہ پتا چل سکے کہ یہ مصنوعات کیسی ہیں ، انہیں کس نے بنایا ہے اور یہ کس ملک میں بنائی گئی ہیں اور انکو بنانے کے لیے کونسا مٹیریل استعمال کیا گیا ہے ، اسکے علاوہ زیوارات پر کوئی برانڈ بھی درج نہیں ہے ۔ یورپین یونین کے اصولوں کے مطابق غیر یورپین ممالک سے آنے والی مصنوعات کے لیے لازمی ہے کہ ان پر تمام ہدایات درج کی جائیں ، اگر اس زیور کو پہن کر کسی شہری کی جلد کو نقصان پہنچے یا پھر اس میں کوئی ایسا مٹیریل استعمال کیا جائے جو کہ صحت کے لیے خطرناک ثابت ہوسکتا ہے تو اس صورت میں حکام ذمہدار ہوتے ہیں ۔ پاکستانی کے زیور پر کوئی مہر، برانڈ ، زیور کے بنانے والی فیکٹری کا نام وغیرہ درج نہیں تھا ۔ اس پاکستانی کو 30 ہزار کا جرمانہ کردیا گیا ہے اور اس کا سامان ضبط کرلیا گیا ہے ۔ تصویر میں ضبط شدہ سامان

Joomla Templates and Joomla Extensions by ZooTemplate.Com