Thursday, May 23rd

Last update12:39:09 AM GMT

سینکڑوں پاکستانی اٹلی لانے والا گینگ گرفتار

روم۔ 30 جنوری 2013 ۔۔۔۔ اٹلی کے شہر ویرونا میں آباد غیر قانونی طور پر سینکڑوں پاکستانی اٹلی لانے والا گینگ گرفتار کر لیا گیا ہے ۔ یہ گینگ جعلی کاغذات اور کنٹریکٹ استعمال کرتے ہوئے غیر ملکیوں کو اٹلی میں داخل کرنے کا کام کرتا تھا ۔ اس گینک کی سرغنہ ایک پیرو کی عورت ہے ، جس کی عمر 49 سال ہے ۔ گینگ کے 6 افراد کو گرفتار کرلیا گيا ہے اور 17 افراد پر پرچہ کردیا گیا ہے ۔ اس کیس پر 2010 میں پولیس نے اس وقت تفتیش شروع کی تھی ، جب فرانس کی پولیس نے ایک غیر قانونی پاکستانی کو اسپین کے بارڈر پر گرفتار کیا تھا اور اس نے یہ کہا تھا کہ اس نے کاغذات ویرونا کے ایک بزنس مین سے حاصل کیے ہیں ۔ پیرو کی عورت Jane Elizabeth Escudero Lamaraویرونا میں آباد ہے اور اسکے ساتھ اسکے بھائی کو بھی گرفتار کرلیا گیا ہے جو کہ کمپیوٹر انجینئر ہے ۔ اس گینگ میں ایک بزنس مین Vigasio, A.Gعمر 67 سال بھی شامل ہے ۔ گینگ کے افراد کو پاکستانیوں کو اٹلی لانے کے لیے ان سے 8 سے 13 ہزار یورو کی رقم حاصل کرتے تھے اور اسکے بعد انہیں جرمنی اور فرانس روانہ کرتے تھے ۔ گینگ والے کنسٹرکشن، ٹرانسپورٹ اور زراعت کے جعلی کنٹریکٹ کرتے تھے اور بریشیا ، بیرگامو اور میلانو کے علاقے میں کام کرتے تھے ۔ گینگ کے افراد میں پاکستانی بھی شامل ہیں ۔

 

Joomla Templates and Joomla Extensions by ZooTemplate.Com