Thursday, May 23rd

Last update12:39:09 AM GMT

آسیہ بی بی کے لیے 31 ہزار دستخط ایمبیسڈر کے حوالے کردیے گئے

روم 10 مارچ 2013 ۔۔۔ اٹلی کے ویٹیکن کے اخبار Avvenireاوینیرے نے آسیہ بی بی کو بچانے کے لیے 31 ہزار دستخط  روم میں موجود پاکستانی ایمبیسڈرتہمینہ جنجوعہ کے حوالے کردیے ہیں ۔ اخبار کے ڈائریکٹر Marco Tarquinioنے کہا کہ آسیہ بی بی پاکستان کی ایک عورت ہے ، ماں ہے یا پھر اس ملک کی بیٹی ہے ۔ آسیہ بی بی کو توہین رسالت ۖ کے کیس میں سزائے موت کا حکم جاری کیا گیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ہم گزشتہ 2 سالوں سے آسیہ بی بی کے لیے اخبار میں ایک جگہ مختص کر رہے ہیں اور یہ بھی لکھ رہے ہیں کہ وہ 1358دنوں سے جیل میں قید ہے ۔ آسیہ بی بی اپنے بچوں اور خاندان کے بغیر جیل میں تنہا زندگی گزار رہی ہے اور اپنے کیتھولک مذہب کی روشنی میں آزادی کی کوششوں میں مصروف ہے ۔ ڈائریکٹر نے کہا کہ ہم نے 2 سال قبل آسیہ بی بی کے متعلق اسکا ایک خط شائع کیا تھا اور سینکڑوں افراد نے اسکی آزادی کے لیے لکھا تھا ۔ اسی دن سے ہم نے دستخط اکٹھے کرنے کی سکیم شروع کی اور 2 سالوں میں 31 ہزار دستخط اکٹھے کرلیے ۔ ہم جانتے ہیں کہ پاکستان ایک عظیم ملک ہے اور وہ آسیہ بی بی کی رہائی اور توہین رسالت کے قانون میں ترمیم کرنے کی کوشش کرے گا ۔ ایک ایسے جج کی ضرورت ہے جو کہ اس قانون کے غلط استعمال سے روکے ۔ پاکستان میں بھی دانشور اسے کالا قانون کہہ کر پکارتے ہیں ، کیونکہ چند عناصر اپنے مفادات کی خاطر اس قانون کا سہارا لیتے ہیں ، اس قانون کیوجہ سے اب تک 4 ہزار لوگوں کو سزائے موت کا حکم جاری کیا جا چکا ہے ۔تصویر میں آسیہ بی بی

 

Joomla Templates and Joomla Extensions by ZooTemplate.Com

آخری تازہ کاری بوقت اتوار, 10 مارچ 2013 19:46