Sunday, Jan 20th

Last update12:39:09 AM GMT

سالانہ بچت کو ظاہر کرنے کا وقت آگیا ہے

روم۔ مارچ 2012 ۔۔ ہر ملازم یا ورکر اپنی تنخواہ میں سے چند ٹیکس ادا کرتا ہے ، ان میں پراویڈنٹ فنڈ اور پنشن کے ٹیکس وغیرہ ہوتے ہیں ، یہ ٹیکس انپس کے دفتر میں کام کے مالکان جمع کرواتے ہیں ۔ ان ٹیکسوں کے علاوہ بھی ملازم دوسرے ٹیکس ادا کرتا ہے جو کہ گورنمنٹ کی دی گئی سہولتوں کے عوض ادا کیے جاتے ہیں ۔ ان سہولتوں میں ہسپتال، سکول، کمونہ اور دوسری سہولتیں شامل ہیں ۔ اٹلی کے قانون کے مطابق وہ تمام لوگ جو کہ کام کرتے ہوئے ایک بچت حاصل کرتے ہیں ، ان کا فرض ہے کہ یہ سالانہ بچت کو ظاہر کریں ، اسے اٹالین میں la dichiarazione dei redditiکہتے ہیں ۔ کام کرنے والوں میں ملازمین اور بزنس مین  وغیرہ تمام بچت کرنے والے افراد شامل ہیں ۔ سالانہ بچت کو ظاہر کرتے ہوئے ایک شخص یہ بتاتا ہے کہ اس نے گزشتہ سال میں کتنی بچت کی ہے ۔ اسکے بعد قانون کے مطابق اس کی بچت پر ٹیکس عائد کیے جاتے ہیں ۔ وہ لوگ جو کہ زیادہ بچت کرتے ہیں ، انہیں زیادہ ٹیکس ادا کرنا ہوتا ہے ۔ ٹیکسوں کا تعین بچت کو دیکھ کر کیا جاتا ہے ۔ یہ ٹیکس گورنمنٹ کے خزانے میں جمع کروائے جاتے ہیں ۔ ملازمین کی صورت میں انکے مالکان ہر ماہ ملازم کے بوستہ پاگا یا پے سلپ سے ہر مہینے ٹیکس جمع کروا دیتے ہیں ۔ ملازم کا حق ہوتا ہے کہ وہ کام شروع کرنے سے قبل مالک کو یہ بتا دے کہ اسے ٹیکسوں کی ڈسکاؤنٹ کا حق ہے یا نہیں ہے ۔ یہ ڈسکاؤنٹ قانون کے مطابق دی گئی ہے ۔ اس کا فرض ہوتا ہے کہ یہ بتا دے کہ اگر اسکی بیوی اور بچے اسکے ذمہ ہیں یا پھر اسکی کوئی دوسری بچت بھی موجود ہے ۔ تمام ملازمین یا ورکر مارچ کے مہینے میں اپنے مالک سے ایک سرٹیفیکٹ حاصل کرتے ہیں ، اسے کوڈ یا cudکہتے ہیں ۔ جو کہ Certificazione Unica dei redditi di lavoro dipendenteکا مخفف ہے ۔ اس کاغذ میں یہ لکھا ہوتا ہے کہ مالک نے گزشتہ سال ملازم کتنی تنخواہ نقد ادا کی ہے اور اسکے کتنے ٹیکس ادا کیے گئے ہیں ۔ مالک کا فرض ہوتا ہے کہ وہ 28 فروری تک کوڈ ملازم کے حوالے کر دے ۔ اس سرٹیفیکٹ کے زریعے یہ اندازہ بھی ہو جاتا ہے کہ مالک نے کتنی تنخواہیں ملازم کو گزرے ہوئے سال میں ادا کی ہیں ۔ اگر ملازم خود استعفی دے یا پھر اسے کسی وجہ سے کام سے نکال دیا جائے تو ملازم کے کہنے پر اسے 12 دنوں کے اندر کوڈ ادا کرنا مالک کا فرض ہوتا ہے ۔ کوڈ میں ملازم کی تمام تر رپورٹ لکھی ہوتی ہے ۔ یعنی اسکی سالانہ تنخواہ ، تمام سال کی رقم ، ادا شدہ ٹیکس اور اسکے علاوہ وہ ٹیکس جو کہ اسے کسی وجہ سے معاف کیے گئے ہیں یا کم کیے گئے ہیں ، یعنی بچوں کا چیک وغیرہ ۔ کوڈ میں ملازم کی ادا شدہ پنشن اور اسکا پراویڈنٹ فنڈ بھی درج ہوتا ہے ۔ ملازم پر لازمی ہوتا ہے کہ وہ مالک کو اپنی تمام تر بچت کے بارے میں بتا دے ۔ یعنی وہ بچت بھی شو کر دے جو کہ اس نے اس کام کے علاوہ حاصل کی ہے ۔ اگر ملازم صرف ایک ملازمت کرتا ہے تو اسے ضرورت نہیں ہوتی کہ وہ سالانہ بچت کا ڈیکلیریشن کرے ۔ اگر ملازم ایک سے زیادہ ملازمت یا کام کرتا ہے تو اس صورت میں اس کا فرض ہوتا ہے کہ یہ سالانہ بچت کا سرٹیفیکٹ پر کرے ۔ اگر ملازم صرف ایک جگہ کام کرتا ہے تو وہ بھی چند وجوہات کی بنا پر سالانہ بچت کا ڈیکلیریشن کر سکتا ہے ۔ یعنی اگر سال کے دوران اس نے میڈیکل اخراجات کیے ہیں ، گھر کی مرمت وغیرہ کے لیے خرچ کیا ہے یا پھر گھر کی قسطوں پر سود کابڑہ گيا ہے ۔ اس صورت میں ملازم کسی Cafیا کسی ایکسپرٹ کے پاس جائے گا اور ایک فارم پر کرے گا ، اس فارم کو 730 o il Modello Unicoکہتے ہیں ۔ یا د رہے کہ سالانہ بچت کو شو کرنے کے لیے اپریل سے جولائی تک کا وقت درکار ہوتا ہے ۔ یعنی اب آپ سالانہ بچت کو شو کرنے کے لیے وقت آگیا ہے ۔ آپ تمام کوڈ اکٹھے کر لیں اور اگر صرف ایک جگہ پر کام کرتے ہیں اور آپ کے مالک نے تمام ٹیکس ادا کر دیے ہیں تو آپ کو کوئی ضرورت نہیں ۔ بزنس کرنے والے حضرات سالانہ بچت کا سرٹیفیکٹ لازمی بھریں گے ۔ تحریر ، ماشا سالواتورے ایڈووکیٹalt

Avv. Mascia Salvatore

 

 

Joomla Templates and Joomla Extensions by ZooTemplate.Com