Tuesday, Nov 19th

Last update12:39:09 AM GMT

کرسمس کے دوران سفر کرنے کی گائیڈ

اٹلی میں موجود غیر ملکی ہمیشہ یہ سوال کرتے ہیں کہ وہ کیسے اپنے ملک واپس جائیں اور انہیں کونسے کاغذات فراہم کرنا ہوتے ہیں ۔ یا پھر یورپ کے کسی ملک میں سیر کرنے کے لیے کونسا طریقہ کار استعمال کیا جاتا ہے ۔ کئی سال گزر جانے کے بعد مختلف نئے حالات پیدا ہوئے ہیں ۔ اب پر میسو دی سوجورنو، سوجورنو کی رسید، پہلی سوجورنو کی رسید، کارتا دی سوجورنو اور دوسری کئی سوجورنو پیدا ہوگئی ہیں ۔ ان تمام کاغذات کو مدنظر رکھتے ہوئے ہم آپ کو ایک گائیڈ کے زریعے آپکے حقوق کے بارے میں بتاتے ہیں ۔

ویزے کے ساتھ ، سوجورنو اور کارتا دی سوجورنو کے ساتھ

یورپین یونین کے نئے قانون 265سال 2010 کے مطابق نئے ضابطے متعارف کروائے گئے ہیں ۔ جن کے تحت یورپین یونین کے شنگن کے ممالک میں سیر کے لیے جایا جا سکتا ہے۔

شنگن کے قانون کے مطابق تمام وہ غیر ملکی جنہوں نے اپنی پر میسو دی سوجورنو پہلی دفع  بنوانے کے لیے جمع کروا رکھی ہے ، انہیں اجازت دی گئی ہے کہ یہ سال کے کسی بھی حصے میں اپنے ملک ڈاک کی رسید کے ساتھ جا سکیں اور اسکے ساتھ ساتھ یورپ کے کسی بھی شنگن کے ملک میں تین ماہ تک سٹے کر سکیں بشرطیکہ انکے پاس Schengen uniformeوالا ویزہ موجود ہو  ۔ وہ غیر ملکی جو کہ اٹلی میں خاندانی ویزہ حاصل کرتے ہوئے یا پھر فلسی کے زریعے آئے ہیں ، انکی سوجورنو بہت دیر بعد جاری ہوتی ہے اور یہ اس عرصے میں یورپ میں سفر کرنے سے قاصر ہوتے تھے اب یہ لوگ شنگن ویزے کے زریعے سوجونو جاری ہونے سے قبل بھی یورپ کا سفر کر سکتے ہیں وہ غیر ملکی جن کے پاس عام پر میسو دی سوجورنو ہے ، یہ لوگ کسی بھی شنگن کے ملک میں تین مہینوں کے لیے سیر کے لیے جا سکتے ہیں لیکن کام نہیں کر سکتے ۔ اب تک شنگن کے ممالک میں اٹلی ، فرانس، جرمنی، اسپین، لکسمبرگ، بیلجیئم ، ہالینڈ، پرتگال، آسٹریا، یونان، سویڈن، ڈینمارک، فن لینڈ، ناروے ، آئی لینڈ ،ایستونیا، ہنگری، لیتونیا، لتوانیا، پولینڈ، سلووینیا، سلوواکیہ، مالٹا اور چیک ریپبلک اور سویٹزرلینڈ  شامل ہیں ۔ اگر آپ کسی دوسرے ملک میں جانے کے خواہش مند ہیں تو اس صورت میں آپ کو اس ملک کا ویزہ حاصل کرنا ہو گا ۔ یاد رہے کہ یورپ میں ٹرانزٹ کرنے کی اجازت ان کو دی گئی ہے ، جنہوں نے پہلی دفع  پر میسو دی سوجورنو رینیو کروانے کے لیے جمع کروا رکھی ہے اور ان کے پاس اٹلی کا کام کا ویزہ ہے ۔ اب اٹالین ایمبیسی تمام نئے آنے والوں کو شنگن ویزہ فراہم کرے گی۔ اس ویزے کو Dویزہ کہتے ہیں ۔ یا پھر وہ ویزہ جو کہ تین ماہ سے زیادہ مدت کا ہو ۔ وہ غیر ملکی جنہوں نے اپنی سوجورنو رینیو ہونے کے لیے جمع کروا رکھی ہے ۔ یہ لوگ شنگن کے ممالک میں ٹرانزٹ نہیں کر سکتے ۔ یہ لوگ اپنے ملک جا سکیں گے اور ان کے لیے ضروری ہو گا کہ یہ اپنے ساتھ پر میسو دی سوجورنو کی اصل ختم شدہ کاپی، رسید اور پاسپورٹ ساتھ لیکر جائیں ۔ ائرپورٹ پر انکی رسید پرمہر لگائی جائے گی اور واپسی پر اسے چیک کیا جائے گا ۔ انہیں یورپ میں ٹرانزٹ کرنے کی اجازت نہیں ہے ۔ وہ غیر ملکی جو کہ سوجورنو کے بغیر اٹلی میں آباد ہیں ، ان کے لیے ضروری ہے کہ یہ کسی بھی ملک کا سفر نہ کریں ۔ وہ غیر ملکی جنہوں نے گزشتہ امیگریشن میں ڈومیسٹک کام یا ملازمت کیوجہ سے سوجورنو کے لیے اپلائی کیا ہے ، انکے لیے بھی ضروری ہے کہ یہ پر میسو دی سوجورنو حاصل کرنے کے بعد کسی ملک کا سفر کریں ۔

اپنے بچوں کے ساتھ سفر کیسے کیا جائے

اگر آپ غیر ملکی ہیں اور آپ کے پاس لمبی مدت کا ڈی ویزہ نہیں ہے ، آپ نے پر میسو دی سوجورنو رینیو ہونے کے لیے جمع کروا رکھی ہے ، یا پھر پہلی دفع جمع کروائی ہے یا پھر آپ کے پاس کوئی رسید موجود ہو تو آپ یورپ کے کسی بھی ملک میں نہیں جا سکتے اور نہ ہی ٹرانزٹ کر سکتے ہیں ۔ جہاں تک بچوں کا تعلق ہے ، اب یورپین یونین کے نئے قانون 444 سال 2009 کے تحت والدین پر ضروری ہے کہ وہ بچوں کے علیحدہ زاتی پاسپورٹ بنوائیں ۔ 18 سال سے کم تمام بچوں کے لیے ضروری ہے کہ وہ اپنا پاسپورٹ بنوائیں۔ اگر بچوں کا اندراج والدین کے پاسپورٹ پر ہے تو اس صورت میں تمام صفر سے تین سال کے بچوں کا والدین کا پاسپورٹ 3 سال کے لیے ویلڈ ہوگا ۔ تین سال سے 18 سال کی عمر تک والدین کا پاسپورٹ 5 سال کا ویلڈ ہوگا ۔ بچوں کی عمر 18 سال ہونے پر یہ اپنا علیحدہ زاتی پاسپورٹ بنوائیں گے ۔ یہ قوانین صرف غیر یورپین امیگرنٹس کے لیے نہیں بلکہ یورپین یونین کے شہریوں کے لیے بھی لازمی ہیں ۔ اگر آپ اپنے ملک جانا چاہتے ہیں ۔ یا پھر کسی یورپین ملک کی سیر کے لیے روانہ ہونے کے خواہشمند ہیں تو آپ  اپنی کونسلیٹ یا ایمبیسی میں جا کر بچوں کا علیحدہ پاسپورٹ بنوا لیں ورنہ خواہ مخواہ آپ کو پریشانی کا سامنا کرنا ہوگا ۔ تمام ایمبیسیاں یہ چاہتی ہیں کہ جب بچوں کے علیحدہ پاسپورٹ بنیں تو دونوں والدین ایک فارم پر دستخط کریں ( چاہے وہ شادی شدہ نہ بھی ہوں ) ۔ اگر ان میں سے ایک حاضر نہ ہوسکے تو اس صورت میں غیر حاضر اپنا شناختی کارڈ اور اجازت نامہ لکھ کر بھیج دیتا ہے لیکن بعض ممالک اس اجازت نامے کو قبول نہیں کرتے ۔ اس لیے آپ اپنی ایمبیسی یا کونسلیٹ سے پوچھ لیں ۔ اگر آپ اپنے ملک جانا چاہتے ہیں تو آپ کے پاس پر میسو دی سوجورنو یا کارتا دی سوجورنو تو  بچوں کے علیحدہ پاسپورٹ ہونے ضروری ہیں ۔ اگر آپ نے سوجورنو رینیو ہونے کے لیے دے رکھی ہے تو اس صورت میں بھی ویلڈ پاسپورٹ، درخواست کی رسید اور ختم شدہ سوجورنو ساتھ لیکر جائیں اور شنگن کے کسی بھی ملک میں نہ جائیں ۔ اگر آپ کے پاس کارتا دی سوجورنو یا پر میسو دی سوجورنو موجود ہے تو آپ یورپ کے کسی بھی ملک میں سوجورنو اور پاسپورٹ کے ساتھ جا سکتے ہیں اور تین ماہ تک رہ سکتے ہیں ۔ اگر آپ اپنے بچوں کے ہمراہ جانا چاہتے ہیں تو انکے علیحدہ پاسپورٹ ہونے ضروری ہیں ۔ یاد رہے کہ اگر 14 سال سے کم بچے اپنے والدین کی بجائے کسی دوسرے کے ساتھ یورپ کے ملک میں جائیں تو اس صورت میں دونوں والدین کا اجازت نامہ ساتھ لیجانا ہوگا ۔ اگر بچہ والدین میں سے کسی ایک کے ساتھ سفر کرے تو اس صورت میں اجازت نامہ لیجانا ضروری نہیں ۔ اٹالین میں گائیڈ پڑھنے کے لیے ہماری سائٹ کا وزٹ کریں ۔ www.stranieriinitalia,it

 

Joomla Templates and Joomla Extensions by ZooTemplate.Com