Monday, Jul 06th

Last update06:26:21 PM GMT

جعلی شناخت پر پاکستانی پر کیس

روم۔ 26 مارچ 2013 ۔۔۔ اٹلی کے شہر لوکا میں ایک 22 سالہ پاکستانی پر جعلی شناخت استعمال کرنے پر پاکستانی پر کیس کر دیا گیا ہے ۔ اصل میں یہ پاکستانی آخری امیگریشن کے کھلنے سے پہلے اٹلی میں آیا تھا اور امیگریشن سے پہلے اسے اٹالین فوڈ کی دکان پر کام مل گیا تھا ۔ وہاں کام کرنے کے لیے اس نے اپنے گھر میں رہنے والے ایک دوسرے پاکستانی کی پرمیسو دی سوجورنو یا ورک پرمٹ استعمال کیا ۔ اس پاکستانی کی عمر اور شکل اس سے ملتی جلتی تھی ۔ دکان والے نے اس سے کام کا کنٹریکٹ کرلیا اور اسکے بعد اس دکان کا دیوالیہ ہو گیا اور اٹالین نے اس پاکستانی کو کام سے نکال دیا ۔ اس پاکستانی نے اس دوران کھلنے والی امیگریشن میں اپنے اصل نام وغیرہ سے درخواست دیدی۔ اسی دوران دکان والے نے اپنے دیوالیے کا کیس مکمل کروانے کے لیے پاکستانی لڑکے کی گواہی حاصل کی اور اسکے بعد پولیس نے دریافت کرلیا کہ اس پاکستانی نے اپنی شناخت بدل لی ہے ۔ اس پاکستانی نے محض کام کرنے کے لیے یا اٹلی میں ریگولر ہونے کے لیے یہ جرم کیا ہے لیکن پولیس والوں نے اسکی امیگریشن کی درخواست مسترد کرتے ہوئے اس پر فراڈ کا کیس کردیا ہے ۔

 

Joomla Templates and Joomla Extensions by ZooTemplate.Com

آخری تازہ کاری بوقت منگل, 26 مارچ 2013 21:54