Sunday, May 31st

Last update06:26:21 PM GMT

ایک ہندوستانی امیگرنٹ نے اٹالین بیوی اور بیٹی کو قتل کر دیا

روم، 7 اپریل 2013 ۔۔۔ کل شام روم کے قریبی شہر چستیرنا دی لاتینا میں  ایک ہندوستانی امیگرنٹ نے اٹالین بیوی اور بیٹی کو قتل کر دیا ہے ۔ ہندوستانی کا نام کمار ہے اور اسکی عمر 35 سال ہے ۔ اس نے اپنی اٹالین بیوی سے انڈیا میں 2008 میں شادی کی تھی اور اسکے بعد اٹلی میں مستقل رہائش کے بعد ان دونوں میں لڑائی جھگڑا رہتا تھا ۔ بیوی نے آخری بار کمار سے رقم مانگی تھی کیونکہ وہ کوئی کام نہیں کرتی تھی ۔ کمار کی بیوی اور اسکی 19 سالہ منہ بولی بیٹی بے روزگار تھیں اور سستے کرائے کے مکان میں آباد تھیں ۔ کمار کی بیوی اس سے قبل تین شادیاں کر چکی تھی ۔ کمار ان سے تنگ تھا ۔ 6 اپریل کی شام کمار اپنی بیوی کے گھر آیا اور اس نے چھری سے پہلے بیوی کو اور اسکے بعد بیٹی کو مار دیا ۔ ہمسائیوں نے پولیس کو بتادیا۔ کمار فرار ہونے میں کامیاب ہو گیا لیکن پولیس نے اسکے موبائل سے اسے ٹریس کرلیا اور گرفتار کرلیا ۔ کمار کے منہ پر ناخنوں کے زخم تھے۔ کچھ دیر بعد کمار نے اقرار جرم کر لیا اور اب اسے جیل میں روانہ کردیا گیا ہے ۔ یاد رہے کہ کل اٹلی کے شہر ماچیراتا میں بھی میاں بیوی نے بے روزگاری سے تنگ آکر خود کشی کرلی ہے اور بیوی کے بھائی نے اس خودکشی کا سن کر سمندر میں ڈوب کر خودکشی کرلی ہے ، یعنی ایک ہی خاندان میں 3 لوگوں نے خودکشی کی ہے ۔ آج پورے اٹلی میں انڈین کے قتل اور خاندان کے قتل کے سلسلے میں بحث ہو رہی ہے کیونکہ موجودہ معاشی بحران کے نتیجے میں بے شمار لوگ بے روزگار ہونے کے بعد بے بس ہوتے جا رہے ہیں ۔ کافی پاکستانی بھی بے روزگاری کی لپیٹ میں آگئے ہیں اور ہمارے مشہور ڈیروں پر 10 بندوں میں سے صرف ایک یا دو کام کر رہے ہیں ۔ تحریر، اعجاز احمد

 

 

Joomla Templates and Joomla Extensions by ZooTemplate.Com