Sunday, Sep 27th

Last update06:26:21 PM GMT

ناحیدہ خان کا تعارف

روم، 12 اپریل 2013 ۔۔۔۔ روم میں پیدا ہونے والی جوان لڑکی ناحیدہ خان کہتی ہیں کہ اٹلی میں شہریت کا قانون تبدیل ہونا لازمی ہے ۔ ناحیدہ خان کے والد پاکستانی ہیں اور اسکی والدہ کا تعلق مراکش سے ہے ۔ ناحیدہ اٹلی میں پیدا ہوئی اور یہاں ہی جوان ہوئی ۔ اس نے اٹالین اخبار کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ 18 سال کی عمر تک اسکے پاس پرمیسو دی سوجورنو تھی ۔ ناحیدہ خان نے کہا کہ میں پاکستان اور مراکش میں صرف چھٹیوں میں جایا کرتی ہوں لیکن میرا ملک اٹلی ہے ۔ میرے ملک نے مجھے 18 سال کی عمر تک غیر ملکی سمجھ رکھا تھا ۔ بالغ عمر پوری کرنے کے بعد میں نے فوری طور پر اٹالین شہریت حاصل کرلی اور اب میں اپنے آپ کو اصل اٹالین شہری سمجھتی ہوں ۔ اس نے کہا کہ میرے جیسے 10 لاکھ ایسے جوان ہیں جو کہ اٹلی میں پیدا ہوئے ہیں یا پھر کمسن عمر میں اٹلی میں آئے تھے ۔ ان جوانوں کو شہریت نہ دینا زیادتی ہے کیونکہ یہ اپنے آپ کو اٹالین تصور کرتے ہیں اور والدین کے ملک میں صرف چھٹیوں کے لیے جاتے ہیں ۔ ناحیدہ خان نے کہا کہ وہ روم میں کئی کام کرنے کے بعد تھک گئی تھی اور ایک مہذب کام نہ ہونے کیوجہ سے پریشان تھی ۔ اسی اثنا میں اس نے فوٹوگرافی کا کورس کیا اور 2012 میں فوٹو گرافری کا پہلا انعام حاصل کرنے میں کامیاب ہو گئی ۔ ناحیدہ خان اب گزشتہ 3 سالوں سے روم کے ساحلی علاقے لادسپولی میں رہ رہی ہے اور دوسری نسل کے جوانوں کی آواز بن گئی ہے ۔ نیچے ناحیدہ خان اور اسکی فوٹوگرافری کی تصاویر 

Joomla Templates and Joomla Extensions by ZooTemplate.Com