Saturday, Mar 25th

Last update08:57:59 PM GMT

فرانس میں دہشت گردی کے واقع کے بعد مسلمانوں کے حالات

روم۔ 18 جنوری 15 ۔۔۔۔ فرانس میں دہشت گردی کے واقع کے بعد یورپین مسلمانوں کے حالات سنگین ہوتے جا رہے ہیں ۔ اٹالین اخباراب کے مطابق شمالی اٹلی میں موجود ہماری پاکستانی مساجد پر نظر رکھی جا رہی ہے اور ہم پر بے جا شک کیا جا رہا ہے ۔ اٹالین سیاسی پارٹی لیگا نورد نے لومبردیا میں ہماری مساجد کی تمام تر کاروائیاں، کرنٹ اکا‎‌ؤنٹ، مساجد کی کمیٹی کے نام اور ہر قسم کی مذہبی کاروائی کا رجسٹر بنانے کا قانون پیش کیا ہے ۔ شمال اٹلی میں منہاج القرآن یورپ کے صدر ارشد شاہ نے اٹالین اخبارات کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ خفیہ پولیس ہمارے اداروں کو چیک کر رہی ہے ۔ پورے اٹلی میں ہمارے 35 ادارے ہیں جو کہ پورے اٹلی میں پھیلے ہوئے ہیں ۔ آج تک پولیس ہمارے کسی بھی ادارے سے عسکریت پسندی، بنیاد پرستی یا انتہا پسندی کے لوازمات تلاش نہیں کر سکی ۔ انہوں نے کہا کہ میرا پیچھا کیا جاتا ہے اور یہ دیکھا جاتا ہے کہ میں کہاں جاتا ہوں ، کس سے بات کرتا ہوں لیکن جب خفیہ ادارے یہ دیکھتے ہیں کہ مجھ میں کوئی خامی نہیں تو وہ خود بخود چلے جاتے ہیں ۔ فرانس میں چارلی ہیبدو کے کارٹونسٹوں کی موت کے بعد پورے یورپ میں مسلمانوں کی کاروائیوں کو شک کی نظر سے دیکھا جا رہا ہے ۔ مشرق اور مغرب کی تاریخی لڑائی دوبارہ سامنے آرہی ہے ۔ بیشتر اسلامی ممالک میں فرانس کے خلاف جلسے اور جلوس نکالے جا رہے ہیں اور ساتھ ہی ساتھ پورے یورپ میں چارلی ہیبدو کی فروخت میں بھی اضافہ ہو رہا ہے ، اب تک 50 لاکھ کاپیاں فروخت ہو چکی ہیں ۔ اس اخبار کے علاوہ فرانسیسی مصنف ہولبیک کی کتاب undermissionبھی شا‏ئع ہو چکی ہے اور اسکی 1 لاکھ 20 ہزار کی اشاعت ہو چکی ہے ۔ یہ کتاب ایک افسانہ ہو ، جس میں یہ دکھایا گیا ہے کہ 2022 میں فرانس کا صدر ایک مسلمان ہو گا اور عورتیں پردہ کریں گی ۔ اس کتاب پر بھی مختلف حلقوں میں کافی تنقیدی بحث کی جا رہی ہے ۔ تحریر، اعجاز احمد

 

Joomla Templates and Joomla Extensions by ZooTemplate.Com