Friday, Jul 21st

Last update08:57:59 PM GMT

بشارت اور اسکی اٹالین بیوی کی تلاش جاری ہے

19 جنوری 2015 ۔۔۔۔ پاکستانی محمد بشارت اور اسکی اٹالین بیوی دوریتا کی تلاش جاری ہے ۔ دوریتا کا تعلق ناپولی شہر سے ہے اور 6 سال قبل اسکی ملاقات محمد بشارت سے ہوئی تھی ۔ دونوں ایک دوسرے سے محبت کرنے لگے اور ایک دن انہوں نے کمونے یا میونسپل کمیٹی میں جا کر شادی کر لی ۔ دوریتا کے والدین اس شادی پر راضی نہیں تھے ۔ محمد بشارت ناپولی میں سڑک پر ایک غیر قانونی اسٹال لگاتے ہوئے گزارا کرتا تھا ۔ اٹالین اخبارات کے مطابق محمد بشارت مذہبی انسان تھا لیکن عسکریت پسند نہیں تھا۔ دوریتا اسکے ساتھ چند سال پہلے پاکستان گئی تھی اور وہاں 2 ماہ رہی تھی ۔ اب یہ دونوں گزشتہ  سال پاکستان کے شہر لاہور گئے تھے جو کہ بشارت کا شہر بھی ہے ۔ انکے ایک چھوٹا سا بیٹا بھی تھا جو انکے ساتھ پاکستان گیا تھا ۔ جون 2013 میں دوریتا پاکستان گئی تھی اور اسکے بعد وہاں کافی عرصہ کے بعد اس نے اپنے والدین کو فون کیا تھا کہ اسکی جان خطرے میں ہے اور روتے روتے اس نے واپس آنے کی خواہش ظاہر کی تھی ۔ والدین نے پریشانی کی حالت میں 15 سو یورو خرچ کرتے ہوئے تین ٹکٹیں خرید کر روانہ کر دی تھیں ۔ انہوں نے کویت ائر کے زریعے وایا کویت روم کے فیومی چینو ائر پورٹ پر آنا تھا ۔ جب یہ فلائٹ روم پہنچی تو پتا چلا کہ دوریتا اور محمد بشارت نے اس فلائٹ پر سفر کیا ہے اور بچہ انکے ساتھ نہیں تھا ۔ اس کے علاوہ یہ لوگ کویت سٹی میں پہنچنے کے بعد دوبارہ اٹلی کے لیے روانہ نہیں ہوئے ۔ ان تمام شک و شبہات کے بعد دوریتا کے اٹالین والدین جو کہ ناپولی میں قدیمی سامان بیچنے کی دکان کے مالک ہیں ، انہوں نے پولیس کو پرچہ کروا دیاہے اور اسکے علاوہ انہوں اٹلی کی وزارت خارجہ کے دفتر میں بھی اپنی بیٹی اور اسکے بچے اور داماد محمد بشارت کی تلاش کے لیے بھی درخواست دیدی ہے ۔ کہا جاتا ہے کہ انکے کاغذات پر کسی دوسرے خاندان نے سفر کیا ہے جو کہ غیر قانونی طور پر کسی منزل کی تلاش میں ہے یا پھر انہیں اغوا کر لیا گیا ہے ۔ اگر آپ اس خاندان کے بارے میں کچھ جانتے ہیں تو ہم سے رابطہ کریں ۔ تحریر اعجاز احعد

موبائل ۔ 00393476937016

Joomla Templates and Joomla Extensions by ZooTemplate.Com