Wednesday, Aug 15th

Last update12:39:09 AM GMT

لیبیا سے اٹلی آنے والی کشتی ڈوب گئی، 90 پاکستانی ہلاک

 

 

2 فروری ۔۔۔۔ تارکین وطن کی بین الاقوامی ایسوسی ایشن اوئم کی ڈائریکٹر ہوئیدن نے ایک بیان میں کہا ہے کہ لیبیا کے شہر زوارا سے اٹلی کی طرف سفر کرنے والی کشتی ڈوب گئی ہے اور اس میں 90 غیر ملکی ہلاک ہوئے ہیں اور چند جو تیر کر ساحل پر پہنچے ہیں ، انہوں نے بتایا ہے کہ کشتی میں تمام تارکین وطن پاکستانی تھے ۔ ساحل پر آنے والی 10 لاشوں میں سے 8 پاکسانیوں کی ہیں اور 2 لیبیا کے شہری ہیں ۔ اوئم کے عملے نے بتایا کہ لیبیا سے 2018 میں کافی پاکستانی غیر قانونی طور پراٹلی آنے کی کوشش کر رہے ہیں ۔ جنوری 2017 میں صرف 9 پاکستانی لیبیا سے اٹلی آئے تھے اور جنوری 2018 میں 246 پاکستانی لیبیا سے اٹلی پہنچے ہیں ۔ سردیوں میں موسم کافی خراب ہو جاتا ہے اور کشتی کے الٹنے کے مواقع بھی بڑہ جاتے ہیں ۔ ڈوبنے والی کشتی کے بارے میں بتایا گیا ہے کہ ایجنٹوں نے کمائی کی خاطر اس کی گنجائش سے زیادہ غیر ملکی بٹھا دیے تھے، اس لیے یہ الٹ کرڈوب گئی ہے ۔ 2017 میں لیبیا سے 3138 پاکستانی غیر قانونی طور پر سسلی کے سمندر سے اٹلی پہنچے تھے ۔ بقلم اعجاز احمد

 

alt

Joomla Templates and Joomla Extensions by ZooTemplate.Com

آخری تازہ کاری بوقت اتوار, 04 فروری 2018 20:35