Sunday, Dec 16th

Last update12:39:09 AM GMT

پاکستانی نژاد فرح کا حمل ضائع کروانے کے لیے اسکے والدین اسے پاکستان لے گئے

 

 

روم۔ 18 مئی 2018۔۔۔۔۔ آج اٹلی کے تمام بڑے اخبارات اور ٹیوی نے یہ خبر شائع کی ہے کہ اٹالین نژاد لڑکی فرح کا حمل ضائع کروانے کے لیے اسکے والدین اسے پاکستان لے کر چلے گئے ہیں اور فرح پر ظلم و تشدد کرنے کے بعد اسکا حمل ضائع کروایا گیا ہے ۔ فرح اٹلی کے شہر ویرونا میں آباد تھی اور اسکا منگیتر ایک اٹالین لڑکا تھا ۔ فرح ٹیکنیکل کالج کے آخری سال کی طالبہ تھی اور اسکی عمر 18 سال ہے ۔ فرح کے والد اور بھائی ویرونا شہر میں ایک دکان کے مالک ہیں اور انکا تعلق اسلام آباد کے نواح سے ہے ۔ فرح نے اپنے والدین اور منگیتر کو بتا دیا تھا کہ وہ حاملہ ہے اور وہ اس لڑکے سے شادی کرنا چاہتی ہے ۔ والدین نے اسکی مرضی کی شادی اور شادی سے قبل حاملہ ہونا پسند نہیں کیا تھا اور اسی خاطر وہ اسے کسی بہانے سے پاکستان لے گئے تھے ۔ وہ جنوری سے پاکستان میں موجود تھی ۔ کل فرح نے اپنی کلاس فیلو اور منگیتر کوایک وٹس اپ کے زریعے باخبر کردیا کہ اسکے والدین نے اسکا حمل ضائع کروانے کے لیے بستر پر 8 گھنٹے تک باندھا رکھا ہے اور ایک ٹیکہ لگا کر حمل ضائع کروا دیا ہے ۔ فرح کے منگیتر اور کالج کے پرنسپل نے فوری طور پر پولیس کو اطلاع دیدی ۔ اسکے بعد پولیس نے اٹالین فارن منسٹری کو بتا دیا اور اسکے بعد اسلام آباد میں موجود اٹالین ایمبیسی نے پاکستانی پولیس کو مطلع کر دیا ۔ پولیس نے فرح کو دستیاب کر لیا ہے اور اسے ایک محفوظ جگہ پر منتقل کر دیا گیا ہے ۔ اٹلی کی سیاسی پارٹیوں کے لیڈران اس حادثے کو سنگین قرار دے رہے ہیں اور سب بیانات دے رہے ہیں کہ اس لڑکی کو فوری طور پر اٹلی لایا جائے۔ یاد رہے کہ ان دنوں اٹلی کے تمام اخبارات اور ٹیوی ثنا چیمہ کے قتل کے بارے میں بحث و مباحثہ کر رہے ہیں ۔ یاد رہے کہ ویرونا رومیو جیولٹ کا شہر ہے اور یہاں لاکھوں سیاح انکے گھر کا وزٹ کرنے کے لیے آتے ہیں ۔ ان دو کیسوں کیوجہ سے پاکستان اور پاکستانی کمونٹی کے بارے میں منفی سوچ کی رائے عامہ عمل میں آرہی ہے ۔

Risultati immagini per farah verona

 

 

 

 

Joomla Templates and Joomla Extensions by ZooTemplate.Com