Friday, Feb 21st

Last update02:30:52 AM GMT

آلتو آدیجے میں پاکستانی نے بیوی کو قتل کر دیا

 

یکم فروری 2020 ۔۔۔۔ 30 جنوری بروز جمعرات، مصطفے زیشان نامی پاکستانی نے اپنی 28 سالہ بیوی فاطمہ زیشان کو لاتوں اور مکوں سے مارتے ہوئے قتل کر دیا ہے ۔ مصطفے کو اٹلی کے شہر بلزانوکی جیل میں بند کر دیا گیا ہے ۔ ملزم بلزانو کے قریب ویرشاکو گا‌‏ؤں میں ایک ریسٹورنٹ میں موسمی ملازم تھا اور اسی ریسٹورنٹ کے دیے گئے فلیٹ میں آباد تھا۔ اسکی عمر 38 سال ہے ۔ پولیس کے مطابق مصطفے نے تفتیش کے دوران تعاون کرنے سے انکار کر دیا ہے اور ظاہر کر رہا ہے کہ اسکی بیوی قدرتی موت کیوجہ سے ہلاک ہوئی ہے ۔ پوسٹ مارٹم کے مطابق فاطمہ کو مارا پیٹا گیا تھا اور اسے سرہانے کی مدد سے گلہ بند کرتے ہوئے قتل کیا گیا ہے ۔ گواہوں اور اسکے ساتھ کام کرنے والوں کی گواہیوں کے باوجود مصطفے نے جرم قبول نہیں کیا ۔ سوموار کے روز دوبارہ تفتیش کی جائے گی ۔ ترجمان کی موجودگی کے باوجود ملزم نے اقرار جرم کرنے سے انکار کیا ہے ۔ یاد رہے کہ اسکی بیوی فاطمہ حاملہ تھی اور اسکے پیٹ میں 8 ماہ کا بچہ تھا ۔ یعنی چند دنوں بعد یہ بچہ پیدا ہونا تھا ، اس لیے مصطفے پر دو قتلوں کا جرم عائد کیا جائے گا ۔  

Orrore in casa, uccide la compagna incinta a calci e pugni: morto anche il bimbo

 

 

Joomla Templates and Joomla Extensions by ZooTemplate.Com

آخری تازہ کاری بوقت ہفتہ, 01 فروری 2020 23:25