Tuesday, Mar 19th

Last update12:39:09 AM GMT

RSS

خبریں

امیگریشن میں مزید نرمی کر دی گئی

 

روم۔ 14 ستمبر 2012 ۔۔۔۔ اٹلی کی وزارت داخلہ نے ایک قانون یا سرکولر کے زریعے 15 ستمبر والی امیگریشن میں مزید نرمی کر دی ہے ۔ وزارت داخلہ نے یہ قانون circolare n. 400/C/2012 del 12 settembreتمام تھانوں کو روانہ کر دیاہے ہور ہدایات دیدی ہیں ۔ کل سے امیگریشن کی درخواست دی جا سکے گی اور امیگریشن کے سلسلے میں کئی غیر ملکی معلومات کی کمی کی وجہ سے پریشان تھے ۔ وہ غیر ملکی جن کے پاس کچھ وقت کام کرنے والی سوجورنو ہے ، وہ بھی امیگریشن میں اپلائی کر سکتے ہیں ۔ تھانوں پر لازمی قرار دیا گیا ہے کہ وہ امیگریشن کی درخواست صرف لوازمات پورے نہ کرنے پر رد کریں ۔ یعنی مالک اور ملازم کے لوازمات اگر پورے نہ ہوں تو اس درخواست مسترد کیا جائے ۔ تمام غیر ملکی جن کا تعلق یورپین کمونٹی سے نہیں ہے اور انکی پرمیسو دی سوجورنو پر کام کرنے کی اجازت نہیں ہے ، وہ تمام امیگریشن کی درخواست دے سکتے ہیں ۔ ایسے غیر ملکیوں میں تعلیم کی پرمیسو دی سوجورنو ، علاج کی سوجورنو، عدالت سے انصاف حاصل کرنے کی سوجورنو ، سیاسی پناہ کے انتظار کی سوجورنو وغیرہ شامل ہیں ۔ کل تک یہی کہا گیا تھا کہ تعلیم کی سوجورنو والے چند شرائط کی بنا پر درخواست دے سکتے ہیں لیکن اب اس اعلان کے زریعے وزارت داخلہ نے تمام طالب علموں کو بھی موجودہ امیگریشن میں درخواست دینے کی اجازت فراہم کر دی ہے ۔ اسکے علاوہ سیاسی پناہ کے انتظار کی سوجورنو والے یا پھر جنہوں نے سیاسی پناہ کے لیے اپلائی کیا ہے یا پھر اپیل کی ہے اور یا پھر دوبارہ اپیل کی ہے ، یہ تمام تارکین وطن درخواست دے سکتے ہیں ۔ کئی پاکستانی اس مسئلے کا شکار ہیں ۔ صرف سیاسی پناہ کی پکی سوجورنو والے اپلائی نہیں کر سکتے لیکن باقی تمام جنہوں نے سیاسی پناہ کے لیے کوشش کی تھی یا پھر انکے پاس سیاسی پناہ کے انتظار کی سوجورنو ہے ، یہ تمام اپلائی کر سکتے ہیں ۔ اگر مالک یا ملازم خطرناک ہونگے یا پھر ان پر وہ جرائم عائد ہونگے ، جن کی بنا پر امیگریشن میں اپلائی نہیں کیا جا سکتا تو اس صورت میں تھانے متحدہ دفتر یا sportello unicoکو معلومات فراہم کر دیں گے ۔ اگر غیر ملکی کو ملک بدری کا نوٹس اس لیے ملا تھا کیونکہ وہ اٹلی میں سوجورنو کے بغیر غیر قانونی طور پر آباد تھا ، تو اس صورت میں تھانے والے درخواست جمع ہونے پر اور لوازمات پورے ہونے پر خود بخود اس نوٹس کو کینسل کر دیں گے اور متحدہ دفتر کو خود ہی اطلاع فراہم کر دیں گے ، یعنی ملازم یا غیر ملکی کو یہ نوٹس حاصل نہیں کرنا ہوگا اور نہ ہی درخواست کے ساتھ روانہ کرنا ہوگا ۔ اس سے پہلے والی امیگریشنوں میں بھی اسی طرح ملک بدری کا نوٹس کینسل کیا جاتا رہا ہے ۔ اگر امیگریشن کی درخواست قبول نہ کی جائے تو اس صورت میں مالک پر غیر قانونی کام دینے کا کیس نہیں کیا جائے گا اور اگر لوازمات میں براہ راست مالک کو مجرم سمجھا گیا تو اس صورت میں مالک کی تفتیش کی جائے گی اور اس پر عدالتی کیس کیا جائے گا ۔ درخواست قبول نہ ہونے کی صورت میں غیر ملکی کو ملک بدری کا نوٹس دیدیا جائے گا ۔ اگر درخواست قبول ہوگئی تو مالک اور ملازم
contratto di soggiornoکریں گے اور غیر ملکی کو کام کی 1 سال کی یا پھر 2 سال کی سوجورنو جاری کر دی جائے گی ۔ غیر ملکی کی سوجورنو کی مدت اسکے کنٹریکٹ کی مدت سے حاصل کی جائے گی ۔ پرمیسو دی سوجورنو حاصل کرنے کے لیے غیر ملکی کو 80 سے 100 یورو کی رقم ادا کرنی ہوگی ۔ وہ غیر ملکی جو کہ موجودہ امیگریشن میں پرمیسو دی سوجورنو حاصل کریں گے ، انہیں انٹیگریشن کا کنٹریکٹ یا l'accordo di integrazioneنہیں کرنا ہوگا کیونکہ یہ کنٹریکٹ صرف ان غیر ملکیوں کے لیے لازمی ہے جو کہ 10 مارچ 2012 کے بعد اٹلی میں آئے تھے ۔ چونکہ یہ امیگریشن صرف ان غیر ملکیوں کے لیے وجود میں آئی ہے جو کہ 31 دسمبر 2011 سے پہلے اٹلی میں موجود تھے ۔ تحریر، ایڈووکیٹ ماشا سالواتورے ۔ تصویر میں وزیر داخلہ کنچیلیری

alt

Joomla Templates and Joomla Extensions by ZooTemplate.Com

کمونٹی کے مسائل کو ترجیح دیں گے ، کونصلر جنرل میلان

روم۔ 11 ستمبر 2012 ۔۔۔۔ میلان میں موجود پاکستان کونصلیٹ کے کونصلر جنرل طارق ضمیر 6 سال سے زائد مدت پوری کرنے کے بعد اٹلی چھوڑ گئے ہیں، عام طور پر افسران کی تقرری 3 سال کے لیے کی جاتی ہے لیکن طارق ضمیر واحد افسر تھے جو کہ 6 سال تک کونصلر جنرل کی سیٹ پر قائم رہے ہیں ، اب انکی جگہ کونصلر جنرل زاہد علی کی پوسٹنگ کر دی گئی ہے ۔ ۔ آزاد کے لومبریا کے نمائندے نے کونصلر جنرل زاہد علی کا انٹرویو لیتے ہوئے انہیں اٹلی آنے پر مبارکباد پیش کی اور خوش آمدید کہا ۔ انہوں نے اپنے بیان میں کہا کہ میں نے کونصلر جنرل کی تقرری سنبھال لی ہے اور کام شروع کر دیا ہے ۔ کونصلر جنرل زاہد علی نے کہا کہ وہ کمونٹی کے مسائل کو ترجیح دیں گے ۔ کمونٹی کے پاسپورٹ بنوانے کے لیے کونصلیٹ کے اوقات صبح 7 بجے سے لیکر شام 7 بجے تک کر دیے گئے ہیں اور تمام عملے کو آگاہ کر دیا گیا ہے کہ وہ تارکین وطن سے خوش اسلوبی سے پیش آئيں اور انکے تمام مسائل سنتے ہوئے انہیں حل کرنے کی کوشش کریں ۔ اسکے علاوہ تمام کمونٹی کے افراد سے بھی اپیل کی جاتی ہے کہ وہ صبر و تحمل سے کام لیتے ہوئے اپنی کونصلیٹ کے اصولوں پر عمل کریں اور قوانین کا احترام کریں ۔ کونصلر جنرل زاہد علی لاہور میں ڈپٹی کمیشنر بھی رہے ہیں اور اب پولینڈ اور شام میں اپنی خدمات پوری کرنے کے بعد اٹلی میں کونصلر جنرل کے فرائض انجام دینے کے لیے منتخب کیے گئے ہیں ۔ زاہد علی کا شمار پاکستان کے منجھے ہوئے اور اعلی بیوروکریٹس میں ہوتا ہے ۔  تصویر میں زاہد علی اپنے میلان کونصلیٹ کے دفتر میں عوامی خدمت کے دوران

alt

 

Joomla Templates and Joomla Extensions by ZooTemplate.Com

زلزلے سے متاثر غیر ملکی اب بھی ٹینٹوں میں آباد ہیں

altروم۔ 6 ستمبر 2012 ۔۔۔ اٹلی کے شمال میں آنے والے حالیہ زلزلے کے بعد بیشتر لوگ اپنے گھروں میں واپس لوٹ گئے ہیں لیکن اب بھی بہت زیادہ غیر ملکی ٹینٹوں میں آباد ہیں اور گھروں کا انتظار کر رہے ہیں ۔ امیلیا رومانیا کے سول پروٹیکشن کے ڈائریکٹر مائینیتی نے کہا کہ اب بھی ٹینٹوں میں 3.327لوگ آباد ہیں اور ان میں سے 80 فیصد غیر ملکی ہیں ، 14 سال سے کم عمر کے بچے 624 ہیں اور 65 سال سے زیادہ عمر کے ضعیف 202 ہیں ۔ یہ لوگ بلونیا، مودینا اور ریجو امیلیا کے صوبوں میں آباد ہیں اور انکے لیے گھر تلاش کرنے کی کوشش جاری ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ہم ٹینٹوں کی تعداد کم کرتے ہوئے ان لوگوں کو چند ٹینٹوں میں اکٹھا کر رہے ہیں اور ہماری خواہش ہے کہ ہم ان تمام متاثرین کو خزاں سے پہلے گھر یا رہائش فراہم کردیں ۔ ہم انکے لیے عارضی گھر تعمیر کرنے کی کوشش کر رہے ہیں اور کرایہ کے گھر بھی تلاش کر رہے ہیں ۔ غیر ملکیوں کا مسئلہ اٹالین سے زرا مختلف ہے کیونکہ انکا کوئی دوسرا گھر نہیں ہوتا اور نہ ہی رشتہ داروں کے گھر ہوتے ہیں ، جہاں یہ عارضی طور پر چلے جائیں ۔ غیر ملکیوں کے گھر تباہ ہونے کے علاوہ انکی نوکری بھی ختم ہو گئی ہے اور انہوں نے پرمیسو دی سوجورنو بھی رینیو کروانی ہے ۔ حکومت نے ان متاثرین کی سوجورنو  ایک سال کے لیے رینیو کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ تصویر مین منہاج القرآن کے ٹینٹ نظر آرہے ہیں

Joomla Templates and Joomla Extensions by ZooTemplate.Com

آخری تازہ کاری بوقت جمعرات, 06 ستمبر 2012 10:06

پاکستان ایمبیسی کے تارکین وطن کے لیے قوانین و ہدایات

روم۔ 15 اگست 2012 ۔۔۔ پاکستان ایمبیسی روم کے بلیک بورڈ پر چند قوانین و ہدایات موجود ہیں جو کہ تارکین وطن کے لیے سود مند ثابت ہو سکتے ہیں ۔

۔ وہ حضرات جنکی شریک حیات غیر ملکی ہیں ، وہ اپنی بیوی کا POCیا پاکستان اوریجن کارڈ بنوا سکتے ہیں ۔

۔ تمام اہل وطن کو بتایا جاتا ہے کہ یہ سفارت خانہ انکا اپنا ہے ، اس لیے وہ کسی بھی ایجنٹ کے بغیر اپنا کام کروا سکتے ہیں ۔

۔ نارمل پاسپورٹ بنانے کی فیس 40 یورو ہے اور اسکی واپسی 45 دن میں ہوگی ۔

۔ ارجنٹ پاسپورٹ بنانے کی فیس 70 یورو ہے اور اسکی واپسی 15 دنوں میں ہو گی ۔

۔ اگر آپ کا پاسپورٹ پہلی دفع گم ہوا ہے تو اسکی فیس 80 یورو ہو گی اور اگر آپ کو یہ پاسپورٹ ارجنٹ چاہئے تو اس صورت میں فیس 140 یورو ہو گی ۔

۔ اگر آپ کا پاسپورٹ دوسری  دفع گم ہوا ہے تو اسکی فیس 160 یورو ہو گی اور اگر آپ کو یہ پاسپورٹ ارجنٹ چاہئے تو اس صورت میں فیس 280 یورو ہو گی ۔

۔ مشین ریڈ ایبل بنوانے کے لیے آپکو پرانا پاسپورٹ یا لاسٹ رپورٹ دینی ہوگی، نادرا کا اصل شناختی کارڈ ، 18 سال سے کم عمر ہونے کی صورت میں " ب فارم " اور والدین کے شناختی کارڈ کی کاپیاں ، اٹالین کاغذات ( اگر موجود ہیں ) تمام کاغذات کی فوٹو کاپیاں

 

۔ اٹالین ویزہ حاصل کرنے کے لیے منگل اور جمعرات کا دن مختص کیا گیا ہے اور ویزے اپلائی کرنے کا وقت صبح 30۔09 سے لیکر 30۔12 بجے تک ہے ۔

۔ وہ پاکستانی جنہیں ملک بدر کیا جا رہا ہے وہ ایمبیسی کے ہیڈ آف چانسلری شہباز کھوکھر سے رابطہ قائم کر سکتے ہیں ، انہیں ایمبیسڈر کی طرف سے Liasion Officerمقرر کیا گیا ہے ۔

 

Joomla Templates and Joomla Extensions by ZooTemplate.Com

آخری تازہ کاری بوقت اتوار, 10 فروری 2013 18:32

پاکستانی ایمبیسی کے تہوار

روم۔ 18 مارچ ، 2012 ۔۔۔ وہ پاکستانی جو کہ قونصلر سیکشن کے معاملات کے لیے روم تشریف لاتے ہیں یا پھر میلان کونصلیٹ میں جاتے ہیں ، ان سے گزارش ہے کہ وہ اس خبر کو کاٹ کر اپنے گھر میں رکھ لیں ورنہ آپ کو بلاوجہ چکر پڑے گا ۔ یاد رہے کہ مندرجہ زیل دنوں میں ایمبیسی اور میلان کونصلیٹ بند رہے گی

6 جنوری بروز جمعہ   Epifania Day

23 مارچ بروز جمعہ  Pakistan Day،

9 اپریل   بروز سوموار  Easter

25 اپریل بروز بدہ    Liberation Day

یکم مئی بروز منگل   labour Day

29 جون بروز جمعہ patron Saint Day  ( یہ چھٹی صرف روم میں ہو گی )

14 اگست بروز منگل Indipendence Day

15 اگست بروز بدہ      Assumption Day

20 اور 21 اگست سوموار اور منگل  Eid ul Fitr*

26 اکتوبر بروز جمعہ     Eid ul Azha*

یکم نومبر بروز جمعرات    All Saints Day

9 نومبر بروز جمعہ    Iqbal Day    

23 نومبر بروز جمعہ     Ashura*

8 دسمبر  بروز جمعرات   Immaculate Day

25 دسمبر بروز منگل   Quaid-e- Azam Day/ Christmas Day

26 دسبمر بروز بدہ   St. Stephens day

جن چھٹیوں پر *یا اس تارے کا نشان ہے ، ان چھٹیوں کا تعین چاند کو دیکھ کر کیا جاتا ہے ۔ وہ پاکستانی حضرات جو کہ اپنے پاسپورٹ اور شناختی کارڈ کے لیے معلومات حاصل کرنے کے لیے فون کرتے ہیں ، ان سے گزارش ہے کہ وہ دوپہر 00۔14 سے لیکر 00۔16 تک فون کریں ۔

 

 

Joomla Templates and Joomla Extensions by ZooTemplate.Com