Thursday, Oct 01st

Last update06:26:21 PM GMT

RSS

اٹلی میں امیگریشن کھلنے کے امکانات

 

روم، 2 فروری 2020۔۔۔۔۔ اٹلی کی وزیر داخلہ لوچیانا لامورجیزے نے قومی اسمبلی میں خطاب کرتے ہوئے اس بات پر زور دیا ہے کہ اٹلی میں اس وقت 7 لاکھ سے زائد غیر قانونی تارکین وطن موجود ہیں اور وہ چھپ کر کام کرتے ہیں اور ٹیکس جمع نہیں کرواتے ۔ اگر ان میں سے کم از کم 4 لاکھ غیر ملکیوں کو امیگریشن کے حقوق دیے جائیں تو یہ لوگ ایک ارب یورو کے ٹیکس جمع کروائیں گے اور پراویڈنٹ فنڈ کا محکمہ ان سے 3 ارب حاصل کرے گا ۔ انکے ٹیکسوں سے ہم اٹلی کے پنشن شدہ اٹالین کی مدد کرسکتے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ امیگریشن حاصل کرنے کے لیے لازمی ہے کہ غیر ملکی اٹلی میں کچھ عرصہ سے آباد ہو، اس سے کوئی کام کا کنٹریکٹ کرسکے ۔ یعنی کھلی امیگریشن نہ کھولی جائے بلکہ ہر کیس کی پڑتال کرنے کے بعد اسے امیگریشن دی جائے ۔ امیگریشن میں کامیابی کے بعد غیر ملکی کو پرمیسو دی سوجورنو یا ورک پرمٹ جاری کیا جائے ۔ وزیر داخلہ کے اس بیان کے بعد دائیں بازو کی سیاسی پارٹیوں نے سخت تنقید کی ہے اور کہا ہے کہ امیگریشن کا اعلان ہوگز نہ کیا جائے ۔ حکومت میں موجود سیاسی پارٹیاں وزیر داخلہ کے اس اقدام پر سوچ بچار کررہی ہیں ۔

Risultato immagini per lamorgese sanatoria

تصویر میں وزیر داخلہ لا مورجیزے اسمبلی میں امیگریشن کی تجویز پیش کرتے ہوئے 

 

 

Joomla Templates and Joomla Extensions by ZooTemplate.Com

آخری تازہ کاری بوقت اتوار, 02 فروری 2020 11:30

آلتو آدیجے میں پاکستانی نے بیوی کو قتل کر دیا

 

یکم فروری 2020 ۔۔۔۔ 30 جنوری بروز جمعرات، مصطفے زیشان نامی پاکستانی نے اپنی 28 سالہ بیوی فاطمہ زیشان کو لاتوں اور مکوں سے مارتے ہوئے قتل کر دیا ہے ۔ مصطفے کو اٹلی کے شہر بلزانوکی جیل میں بند کر دیا گیا ہے ۔ ملزم بلزانو کے قریب ویرشاکو گا‌‏ؤں میں ایک ریسٹورنٹ میں موسمی ملازم تھا اور اسی ریسٹورنٹ کے دیے گئے فلیٹ میں آباد تھا۔ اسکی عمر 38 سال ہے ۔ پولیس کے مطابق مصطفے نے تفتیش کے دوران تعاون کرنے سے انکار کر دیا ہے اور ظاہر کر رہا ہے کہ اسکی بیوی قدرتی موت کیوجہ سے ہلاک ہوئی ہے ۔ پوسٹ مارٹم کے مطابق فاطمہ کو مارا پیٹا گیا تھا اور اسے سرہانے کی مدد سے گلہ بند کرتے ہوئے قتل کیا گیا ہے ۔ گواہوں اور اسکے ساتھ کام کرنے والوں کی گواہیوں کے باوجود مصطفے نے جرم قبول نہیں کیا ۔ سوموار کے روز دوبارہ تفتیش کی جائے گی ۔ ترجمان کی موجودگی کے باوجود ملزم نے اقرار جرم کرنے سے انکار کیا ہے ۔ یاد رہے کہ اسکی بیوی فاطمہ حاملہ تھی اور اسکے پیٹ میں 8 ماہ کا بچہ تھا ۔ یعنی چند دنوں بعد یہ بچہ پیدا ہونا تھا ، اس لیے مصطفے پر دو قتلوں کا جرم عائد کیا جائے گا ۔  

Orrore in casa, uccide la compagna incinta a calci e pugni: morto anche il bimbo

 

 

Joomla Templates and Joomla Extensions by ZooTemplate.Com

آخری تازہ کاری بوقت ہفتہ, 01 فروری 2020 23:25

چائنہ پاک انوسٹمنٹ کارپوریشن CPICکا بریشیا پروگرام

 

چائنہ پاک انوسٹمنٹ کارپوریشن کو ایک کامیاب پرائیویٹ فرم کے طور پر بہترین کارکردگی پرایوارڈ سے نوازا گیا ہے ۔ اس فرم کا ہیڈ آفس لندن میں ہے اور اسکے دفاتر نیویارک، دوبئی اور کراچی میں بھی موجود ہیں ۔ چائنہ پاک اکنامک منصوبے یعنی CPECمیں 62ارب ڈالرزا کی سرمایہ کاری کی جا رہی ہے اور اس بڑے منصوبے میں گوادر بندرگاہ پر تیزی سے اہم سرمایہ کاری پر رجحان دیا جا رہا ہے ۔

جنوبی ایشیا میں گوادر ایک بہت بڑا ٹریڈ سنٹر بننے جا رہا ہے اور اسی وجہ سے یہاں سب سے زیادہ انوسٹمنٹ کی جا رہی ہے ۔ بحرہ عرب میں گوادر کی اہمیت اس لیے بھی زیادہ ہے کیونکہ یہ بندرگاہ چائنہ پاک منصوبے کا سب سے بڑا سرچشمہ ہے ۔ پاکستان حکومت نے 2015 میں گوادر شہر میں 1.62 ارب ڈالرز کے ترقیاتی منصوبے بنائے ہیں ۔

 

وزیر اعظم عمران خان نے بھی ہرموقع پر زور دیا ہے کہ اس بندرگاہ کی ترقی کے لیے دن رات کام کیا جائے ۔ ترقی کے بیشتر منصوبے 2020 میں مکمل کیے جائیں گے ، اس لیے وقت آگیا ہے کہ گوادر پورٹ میں انوسٹمنٹ کے لیے تیاری کی جائے ۔ گوادر بندرگاہ کو دنیا کی سب سے بڑی اور کامیاب پورٹوں یعنی شیزن، دوبئی اور ہانگ کانگسے تشبیع دی جا رہی ہے ۔

CPICفرم کے اراکین 8 فروری کے روز بریشیا تشریف لا رہے ہیں، جہاں وہ شہر کے پاکستانی عوام سے ملاقات کرتے ہوئے گوادر منصوبے Phase2  کے بارے میں اپنے خیالات کا اظہار کریں گے ۔ چائنہ پاک گلف اسٹیٹس کے پاس بہت شاندار پلاٹس موجود ہیں جو کہ گوادرشہر کی زینت بنیں گے ۔ اس ایریامیں تمام تر شہری سہولیات میسر کر دی جائیں گی اوراسکے تمام پلاٹس فوری طور پر خریداروں کے حوالے کردیے جائیں گے ۔ بریشیا میٹنگ میں موجود عوام کے لیے اسپیشل پروموشن رعا‏ئت کی جائے گی ۔ گوادر شہر میں فیز 2 منصوبے کا اعلان بریشیا میں کیا جا رہا ہے ۔ ضرور تسریف لائیں۔ میریٹ ہوٹل میں میٹنگ دوپہر 12 بجے شروع ہوگی اور رات 8 بجے ختم ہو گی ۔ ہوٹل کا ایڈریس مندرجہ زیل ہے ۔

Risultato immagini per cpic global review

 

Downtown Phase 2 Official Brescia Launch

8th February, 12-8pm

AC Hotel by Marriott

Via Giulio Quinto Stefana, 3, 25126 Brescia

 

Joomla Templates and Joomla Extensions by ZooTemplate.Com

پاکستانی نژاد فرح کا حمل ضائع کروانے کے لیے اسکے والدین اسے پاکستان لے گئے

 

 

روم۔ 18 مئی 2018۔۔۔۔۔ آج اٹلی کے تمام بڑے اخبارات اور ٹیوی نے یہ خبر شائع کی ہے کہ اٹالین نژاد لڑکی فرح کا حمل ضائع کروانے کے لیے اسکے والدین اسے پاکستان لے کر چلے گئے ہیں اور فرح پر ظلم و تشدد کرنے کے بعد اسکا حمل ضائع کروایا گیا ہے ۔ فرح اٹلی کے شہر ویرونا میں آباد تھی اور اسکا منگیتر ایک اٹالین لڑکا تھا ۔ فرح ٹیکنیکل کالج کے آخری سال کی طالبہ تھی اور اسکی عمر 18 سال ہے ۔ فرح کے والد اور بھائی ویرونا شہر میں ایک دکان کے مالک ہیں اور انکا تعلق اسلام آباد کے نواح سے ہے ۔ فرح نے اپنے والدین اور منگیتر کو بتا دیا تھا کہ وہ حاملہ ہے اور وہ اس لڑکے سے شادی کرنا چاہتی ہے ۔ والدین نے اسکی مرضی کی شادی اور شادی سے قبل حاملہ ہونا پسند نہیں کیا تھا اور اسی خاطر وہ اسے کسی بہانے سے پاکستان لے گئے تھے ۔ وہ جنوری سے پاکستان میں موجود تھی ۔ کل فرح نے اپنی کلاس فیلو اور منگیتر کوایک وٹس اپ کے زریعے باخبر کردیا کہ اسکے والدین نے اسکا حمل ضائع کروانے کے لیے بستر پر 8 گھنٹے تک باندھا رکھا ہے اور ایک ٹیکہ لگا کر حمل ضائع کروا دیا ہے ۔ فرح کے منگیتر اور کالج کے پرنسپل نے فوری طور پر پولیس کو اطلاع دیدی ۔ اسکے بعد پولیس نے اٹالین فارن منسٹری کو بتا دیا اور اسکے بعد اسلام آباد میں موجود اٹالین ایمبیسی نے پاکستانی پولیس کو مطلع کر دیا ۔ پولیس نے فرح کو دستیاب کر لیا ہے اور اسے ایک محفوظ جگہ پر منتقل کر دیا گیا ہے ۔ اٹلی کی سیاسی پارٹیوں کے لیڈران اس حادثے کو سنگین قرار دے رہے ہیں اور سب بیانات دے رہے ہیں کہ اس لڑکی کو فوری طور پر اٹلی لایا جائے۔ یاد رہے کہ ان دنوں اٹلی کے تمام اخبارات اور ٹیوی ثنا چیمہ کے قتل کے بارے میں بحث و مباحثہ کر رہے ہیں ۔ یاد رہے کہ ویرونا رومیو جیولٹ کا شہر ہے اور یہاں لاکھوں سیاح انکے گھر کا وزٹ کرنے کے لیے آتے ہیں ۔ ان دو کیسوں کیوجہ سے پاکستان اور پاکستانی کمونٹی کے بارے میں منفی سوچ کی رائے عامہ عمل میں آرہی ہے ۔

Risultati immagini per farah verona

 

 

 

 

Joomla Templates and Joomla Extensions by ZooTemplate.Com

بریشیا کی صنا چیمہ کو اسکے والد اور بھائی نے قتل کر دیا

 

21 اپریل 18 ۔۔۔۔ آج اٹلی کے شمالی شہر کے اٹالین اخبار بریشیا اوجی نے خبر دی ہے کہ صنا چیمہ کو اسکے والد اور بھائی نے قتل کر دیا ہے ۔ پورے اٹلی کے اخبارات اور ٹیوی اور ریڈیوز نے اس ہولناک خبر کو شائع کرتے ہوئے تشویش کا اظہار کیا ہے اور ایک بار پھر پاکستانی کمونٹی کے بارے میں منفی بیانات سامنے آرہے ہیں ۔

صنا چمیہ کی عمر 25 سال تھی اور کافی سالوں سے اٹلی کے شمالی شہر بریشیا میں اپنے والدین کے ساتھ آباد تھی ۔ اس نے یہیں سے تعلیم حاصل کی تھی اور اب ایک لائسنس بنانے والی ایجنسی میں کام کر رہی تھی ۔ اسکے والدین نے اٹالین پاسپورٹ حاصل کرنے کے بعد جرمنی جانے کا فیصلہ کیا تھا اور اب وہیں آباد تھے۔ کہا جاتا ہے کہ سنا ایک اٹالین سے شادی کرنا چاہتی تھی اور اسکے گھر والے اس کے فیصلے کے خلاف تھے ۔ صنا کے اٹالین دوستوں اور ایجنسسی والوں نے بتایا کہ وہ ہنس مکھ اور ہمدرد لڑکی تھی اور سب سے اخلاق سے پیش آتی تھی ۔ اس کیس کی تفتیش میں اٹالین ایمبیسی اسلام آباد بھی اپنا کردار ادا کرے گی ۔ 

alt

صنا چیمہ گزشتہ 2 ماہ سے پاکستان کے شہر گجرات گئی ہوئی تھی ، جیسا کہ وہ اکثر جایا کرتی تھی لیکن اس بار اسکا آخری سفر تھا ۔ اسی عرصے میں اسکا والد اور بھائی بھی جو کہ جرمنی میں آباد تھے، گجرات آئے ہوئے تھے ۔ انہوں نے موقع کا فائدہ اٹھا کر اپنی عزت کے نام پر سنا کو قتل کر دیا ۔ گجرات پولیس نے ان دونوں کو گرفتار کر لیا ہے ۔ یاد رہے کہ صنا کے پاس اٹالین پاسپورٹ تھا اور جرمنی جانے کے لیے تیار نہیں تھی۔ 

alt

یاد رہے کہ 2006 میں اسی شہر کی ایک پاکستانی لڑکی حنا سلیم کو اسکے والد اور بہنوئی نے قتل کردیا تھا ۔ اسی طرح بلونیا کے قریبی گاؤں میں چند سال قبل شہناز بیگم کو اسکے خاوند اور بھائی نے قتل کر دیا تھا اور اسی کیس میں نوشین بٹ یعنی شہناز بیگم کی بیٹی بھی بری طرح زخمی ہوگئی تھی اور کئی دن بیہوش رہنے کے بعد حوش میں آئی تھی ۔ اب اسی سال مچیراتا شہر کے ایک گاؤں میں ایک پاکستانی نے اپنی 19 سالہ بیٹی کو ازکا ریاض کو قتل کر دیا ہے ، جسکی تفتیش ابھی ہو رہی ہے کیونکہ ازکا کے والد نے کہا ہے کہ یہ کار ایکسیڈنٹ میں مری تھی ۔

تصویر میں صنا اور اسکا والد 

 

Joomla Templates and Joomla Extensions by ZooTemplate.Com

آخری تازہ کاری بوقت ہفتہ, 21 اپریل 2018 17:22