Tuesday, Mar 19th

Last update12:39:09 AM GMT

RSS

بے روزگاری الاؤنس حاصل کرنے کے لیے آن لائن درخواست دیں

INPSیا انپس کے دفتر نے اعلان کیا ہے کہ بے روزگاری الاؤنس حاصل کرنے کے لیے آن لائن درخواست دی جا سکتی ہے ۔ درخواست دینے کے لیے آپکو انپس کی انٹرنیٹ کی سائٹ  www.inps.itسےرجوع کرنا ہوگا ۔ درخواست دینے کے لیے آپکو انپس کی انٹرنیٹ کی سائٹ کا پن کوڈ حاصل کرنا ہوگا ۔ یہ ایک پرسنل کوڈ ہے جو کہ انپس کی انٹرنیٹ کی سائٹ میں جا کر آپکو حاصل کرنا ہوگا ۔ لنک میں جا کر richiesta Pin online میں کلک کریں ۔ اسکے بعد آپ سے چند لوازمات پورا کرنے کے لیے کہا جائے گا ۔ اسکے بعد 8 لیٹروں میں ایک نامکمل پن جاری کیا جائے گا ۔ اسکے بعد مزید معلومات کے بعد ایک مکمل کوڈ یا پن جاری کر دیا جائے گا ۔ کوڈ کے ساتھ آپ انپس کی ٹیلی میٹک سروس سے فائدہ اٹھا سکیں گے ۔ پن کوڈ آپ کے گھر کے ایڈریس پر روانہ کر دیا جائے گا اور اسکے بعد انپس کے گرین نمبر والے آپ سے کوڈ حاصل کرنے پر تسلی کریں گے ۔ انپس نے اعلان کیا ہے کہ اب صرف عام بے روزگاری کی درخواستوں پر آن لائن درخواست دی جائے گی ، یعنی زراعت کی بے روزگاری کی درخواست آن لائن قبول نہیں ہوگی لیکن چند ہفتوں میں تمام قسم کی درخواستوں پر آن لائن عملدرآمد کرنے کا کام شروع کر دیا جائے گا ۔ پن کوڈ حاصل کرنے کے بعد ایک شہری یا غیر ملکی سیکشن servizio al cittadino  میں جائے گا ، اسکے بعد آپکو ایک خانے Indennità didisoccupazioneمیں جانا ہوگا ۔ یہاں ورکر یا ملازم کی  اور اسکے کام کی تمام تر معلومات موجود ہونگی ۔ یہ معلومات عام طور پر مکمل نہیں ہوتیں ، ورکر اپنی بقیہ جات معلومات اس خانے میں شامل کر سکتا ہے ۔  اسکے بعد یہاں آخری 4 سالوں کے جمع کروائے ہوئے ٹیکس سامنے آجائیں گے ۔ بے روزگاری الاؤنس حاصل کرنے کے لیے عام طور پر 2 سالوں کے ٹیکس درکار ہوتے ہیں لیکن باقی سالوں کے جمع شدہ ٹیکس درخواست پر کرنے کے لیے درکار ہوتے ہیں ۔  انپس کے دفتر والے آخری دو سالوں کے ٹیکسوں کو ترجیح دیتے ہیں کیونکہ بے روزگاری الاؤنس کا حساب استعفی کے روز سے شروع ہوتا ہے ۔ بے روزگاری الاؤنس حاصل کرنے کے لیے آخری 2 سال یا 52 ہفتوں کا کیا ہوا کام ضروری ہوتا ہے ۔ یعنی ضروری نہیں کہ آپ نے 2 سال کے عرصے میں تمام دن کام کیا ہو ، ضروری ہے کہ آپ نے 2 سال کے عرصے میں 52 ہفتے کام کیا ہو۔  تمام معلومات حاصل کرنے کے بعد اور تمام کوائف پورے ہونے کے بعد بے روزگاری الاؤنس کے بارے میں بتایا جاتا ہے ۔  اگر پچھلے 3 مہینوں میں آپکے ٹیکس جمع نہیں کروائے گئے یا پھر سسٹم میں شامل نہیں کیے گئے تو اس صورت میں آپکی  بے روزگاری الاؤنس حاصل کرنے کی درخواست روک دی جائے گی اور اس پر انپس کے ملازمین پڑتال کرتے ہوئے درخواست پر کام کریں گے ۔ تمام تر معلومات حاصل کرنے کے بعد درخواست دہندہ سے مزید معلومات حاصل کی جائیں گی جو کہ بے روزگاری الاؤنس حاصل کرنے کے لیے لازمی ہوتی ہیں ۔ یعنی درخواست دہندہ کے ایڈریس کے CAPلکھنے کے بعد انپس کے مختلف مطلوبہ دفاتر سامنے آجائیں گے اور درخواست دہندہ ان میں سے ایک دفتر کو قبول کرے گا ۔ اسکے بعد ایک دفتر حاصل کرنے کے بعد درخواست دہندہ اس دفتر کے لیے ایک فون نمبر اور ایک ای میل چھوڑ دے گا ۔ درخواست دہندہ کی تعلیم اور اسکے کام کی کولیفیکشن اس لیے پوچھی جاتی ہے تا کہ بے روزگاری کے دفتر اور صوبائی دفتر کو یہ بتایا جاسکے کہ یہ شخص کام تلاش کر رہا ہے ۔ اسکے بعد درخواست دہندہ سے یہ پوچھا جاتا ہے کہ اگر یہ خاندان کا چیک حاصل کرنے کا حق رکھتا ہے یا نہیں ۔ خاندان کا چیک حاصل کرنے کے لیے درخواست دہندہ کو ایک حلفیہ بیان دینا پڑتا ہے ۔ ایک حلفیہ بیان کے زریعے ٹیکس معاف کروانے کا فارم پر کیا جاتا ہے ۔ ایک بیان کے زریعے یہ بتایا جاتا ہے کہ مجھے مدت ختم ہونے کے بعد یا بیماری کیوجہ سے مستعفی کر دیا گیا ہے ۔  بے روزگاری الاؤنس حاصل کرنے کے لیے درخواست دہندہ یا تو اپنے بنک کا کرنٹ اکاؤنٹ استعمال کر سکتا ہے یا پھر اسے پوسٹ آفس کے زریعے رجسٹری کی صورت میں اسکے درج کردہ ایڈریس پر بے روزگای کا چیک روانہ کیا جا سکتا ہے ۔ بے روزگاری الاؤنس حاصل کرنے کے علاوہ ورکر کا حق ہے کہ وہ فوری طورپر یہ بتائے کہ وہ نیا کام کرنے کے لیے تیار ہے اور اسکے لیے وہ اپنی تمام تر معلومات کے استعمال کی قانونی اجازت فراہم کرتا ہے ۔  درخواست مکمل ہونے کے بعد اگر کوئی کمی رہ گئی ہو تو اس صورت میں بھی درخواست مکمل کرنے کی اجازت دی جاتی ہے ۔ درخواست مکمل کرنے کے بعد اسکی ایک کاپی پرنٹ کرلیں ۔ انپس والے آپکو درخواست حاصل کرنے کی ایک رسید روانہ کر دیں گے ۔

 

 

Joomla Templates and Joomla Extensions by ZooTemplate.Com

اٹلی کی مکس شادیوں میں کمی

روم ۔ تحریر ۔ ایلویو پاسکا ۔۔۔ اٹلی میں غیر ملکی اور اٹالین یا کسی دوسرے ملک کی عورت سے شادی ہوتی ہے تو اسے matrimonio mistoیا مکس شادی کے نام سے پکارا جاتا ہے ۔ اٹلی میں جب سے پکیتو سیکوریسا یا سیکورٹی کا قانون را‏ئج ہوا ہے ، اس وقت سے اس ملک میں مکس شادیوں میں کمی آئی ہے ۔ کہا جاتا ہے کہ اٹلی کے وزیر داخلہ مارونی کی وجہ سے اٹلی میں کم مکس شادیاں ہورہی ہیں ۔ اس سے قبل ایک غیر قانونی تارک وطن شادی کر سکتا تھا اور فیملی کی سوجورنو حاصل کر سکتا تھا ۔ اٹلی کے ادارے اسٹاٹ نے ایک ریسرچ کے زریعے ثابت کیا ہے کہ اٹلی میں عام شادیاں بھی کم ہو رہی ہیں ۔ 2010 میں صرف 2 لاکھ 17 ہزار شادیاں ہوئی ہیں جو کہ 2009 کے مطابق بہت کم ہیں ۔ یعنی ہر 1 ہزار شہریوں میں صرف 3،6 شادی کررہے ہیں ۔ صرف 2 سالوں میں 30 ہزار شادیاں کم ہوئی ہیں ۔ یاد رہے کہ 2008 میں 2لاکھ 46 ہزار شادیاں ہوئی تھیں جو کہ ہر 1 ہزار شہریوں میں 4،1 شادیاں ہوتی ہیں ۔ یاد رہے کہ اٹلی میں شادیوں کی کمی کی وجہ غیر ملکی ہیں ۔ کم ہونے والی شادیوں میں میاں یا بیوی غیر ملکی ہوتے ہیں  ۔ 2009 میں اسٹاٹ کے مطابق مکس شادیاں 32 ہزار ہوئی تھیں جو کہ تمام شادیوں کی 14 فیصد بنتی ہے  ۔ 2008 میں 5 ہزار شادیاں 2009 سے زیادہ ہوئی تھیں ۔ اب 2010 میں انکی تعداد مزید کم ہوگئی ہے ۔ مکس شادیوں میں جن میں میاں یا بیوی اٹالین ہوتی تھی ، ان میں بھی کمی واقع ہوئی ہے ۔ 2009 میں اٹالین اور غیر ملکیوں کے درمیان 21 ہزار شادیاں ہوئی تھیں ۔ 2008 میں اٹالین اور غیر ملکیوں کے درمیان 24 ہزار شادیاں ہوئی تھیں۔ یعنی ہر سال ان میں کمی واقع ہو رہی ہے ۔ خاص طور پر اٹالین عورتوں اور غیر ملکی مردوں کے درمیان شادیوں میں انتہائی کمی واقع ہوئی ہے یعنی 23،9 فیصد شادیاں کم ہوگئی ہیں ۔ اسٹاٹ کے مطابق غیر ملکی اور اٹالین کے درمیان شادیوں میں کمی کی وجہ سیکورٹی کا قانون ہے ۔ dell’art. 1 comma 15 della legge n. 94/2009کے تحت غیر ملکی پر لازمی قرار دیدیا گیا ہے کہ کمونے سے شادی کرنے کا سرٹیفیکٹ حاصل کرنے کے علاوہ ریگولر پر میسو دی سوجورنو بھی شو کرے ۔ ہم کہہ سکتے ہیں کہ اس قانون کیوجہ سے اٹلی میں مکس شادیوں میں کمی آئی ہے ۔ یاد رہے کہ حکومت نے یہ قانون اس لیے بنایا تھا تا کہ کاغذات حاصل کرنے کی شادیوں کا سدباب کیا جا سکے لیکن کتنے ایسے رانجھے، رومیو اور مجنوں ہیں جو اس قانون کیوجہ سے اپنی ہیر، جیولیٹ اور لیلی' سے شادی نہیں کر سکے ۔ 2012 میں بھی مکس شادیاں کم ہوئی ہیں ۔ ایک اور وجہ یہ ہے کہ غیر ملکی نہیں چاہتا کہ وہ اٹلی چھوڑ کر اپنے ملک میں جائے اور وہاں اپنی اٹالین منگیتر کو بلائے ، اسکے علاوہ یہ منگیتر بھی پاکستان جانے سے ڈرتی ہے ۔

 

Joomla Templates and Joomla Extensions by ZooTemplate.Com

مظہر اقبال کا تعارف

8 اپریل 2013 ۔ تحریر، حاجی وحید  پرویز از بریشیا ۔۔۔۔۔ مظہر اقبال کا تعلق منڈی بھا ؤالدین کی مشہور تحصیل پھالیہ سے ھے- مقامی سکول سے ابتدائ تعلیم مکمل کرنے کے بعد آبائ پیشہ کھیتی باڑی سے منسلک ھو گے- اس کام میں دل نہ لگا تو 2 سال بعد یہ کام چھوڑ دیا اور لکڑی کے دروازے کھڑکی بنانے کا کام سیکھا- اپنی لگن اور محنت کے با عث قلیل عرصے میں ٹھیکیدار بن گے- عرصہ 15 سال اس کام سے وابستہ رہے-اس کام سے بھی دل بھر گیا تو یورپ آنے کا ارادہ کیا-1994 میں ایران،ترکی،اور البانیہ سے ھوتے ھوے اٹلی پہنچے- 3ماہ اٹلی میں قیام کے بعد فرانس اور بلجییم سے ھوتے ھوے جرمنی چلے گے- 4 سال جرمنی میں ریسٹو رنٹ کے کام سے وابسطہ رھے- 1998 میں اٹلی کی امیگریشن کھلی تو جرمنی سے واپس آ کر کاغزات حاصل کیے- گاڑیوں کے پرزے بنانے والی کئی  فیکٹریوں میں کام کر چکے ھیں- ان دنوں تانبے کے پا ئپ بنانے والی فیکٹری میں کام کر رہے ھیں- صوبہ بریشیا کے مشھور شہر مونتی کیاری میں گزشتہ ١٥ سال سے اپنی فیملی کے ساتھ مقیم ھیں-انسانیت کے لیے درد دل رکھتے ھیں اور خدمت خلق کو عبادت کا درجہ دیتے ھیں- عزیزوں ، رشتے داروں اور دوستوں کی خدمت کر کے دلی خوشی محسوس کرتے ھیں- رفاھی اور سماجی کاموں میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیتے ھیں- مظہراقبال نے آزاد اخبار کے بارے میں اظھار خیال کرتےہوئے کہا کہ پا کستانی کمیونٹی کے لیے انتہائی مفید اور اھم خبروں سے با خبر رکھنے والا اردو اخبار ھے- پاکستانی ھم وطنوں کے نام اپنے پیغام میں انھوں نے کہا کہ دنیاوی زندگی انتہائ مختصر ھے اس لیے زندگی میں ایسے کام کیے جائیں جو دنیا اور آخرت میں کامیابی کا سبب بنیں- موبائل ونڈ- 3336161873

Joomla Templates and Joomla Extensions by ZooTemplate.Com

ایک ہندوستانی امیگرنٹ نے اٹالین بیوی اور بیٹی کو قتل کر دیا

روم، 7 اپریل 2013 ۔۔۔ کل شام روم کے قریبی شہر چستیرنا دی لاتینا میں  ایک ہندوستانی امیگرنٹ نے اٹالین بیوی اور بیٹی کو قتل کر دیا ہے ۔ ہندوستانی کا نام کمار ہے اور اسکی عمر 35 سال ہے ۔ اس نے اپنی اٹالین بیوی سے انڈیا میں 2008 میں شادی کی تھی اور اسکے بعد اٹلی میں مستقل رہائش کے بعد ان دونوں میں لڑائی جھگڑا رہتا تھا ۔ بیوی نے آخری بار کمار سے رقم مانگی تھی کیونکہ وہ کوئی کام نہیں کرتی تھی ۔ کمار کی بیوی اور اسکی 19 سالہ منہ بولی بیٹی بے روزگار تھیں اور سستے کرائے کے مکان میں آباد تھیں ۔ کمار کی بیوی اس سے قبل تین شادیاں کر چکی تھی ۔ کمار ان سے تنگ تھا ۔ 6 اپریل کی شام کمار اپنی بیوی کے گھر آیا اور اس نے چھری سے پہلے بیوی کو اور اسکے بعد بیٹی کو مار دیا ۔ ہمسائیوں نے پولیس کو بتادیا۔ کمار فرار ہونے میں کامیاب ہو گیا لیکن پولیس نے اسکے موبائل سے اسے ٹریس کرلیا اور گرفتار کرلیا ۔ کمار کے منہ پر ناخنوں کے زخم تھے۔ کچھ دیر بعد کمار نے اقرار جرم کر لیا اور اب اسے جیل میں روانہ کردیا گیا ہے ۔ یاد رہے کہ کل اٹلی کے شہر ماچیراتا میں بھی میاں بیوی نے بے روزگاری سے تنگ آکر خود کشی کرلی ہے اور بیوی کے بھائی نے اس خودکشی کا سن کر سمندر میں ڈوب کر خودکشی کرلی ہے ، یعنی ایک ہی خاندان میں 3 لوگوں نے خودکشی کی ہے ۔ آج پورے اٹلی میں انڈین کے قتل اور خاندان کے قتل کے سلسلے میں بحث ہو رہی ہے کیونکہ موجودہ معاشی بحران کے نتیجے میں بے شمار لوگ بے روزگار ہونے کے بعد بے بس ہوتے جا رہے ہیں ۔ کافی پاکستانی بھی بے روزگاری کی لپیٹ میں آگئے ہیں اور ہمارے مشہور ڈیروں پر 10 بندوں میں سے صرف ایک یا دو کام کر رہے ہیں ۔ تحریر، اعجاز احمد

 

 

Joomla Templates and Joomla Extensions by ZooTemplate.Com

لائسنس کا امتحان صرف اٹالین میں دیا جائے گا

2011 سے اٹلی میں ڈوائیونگ لائسنس حاصل کرنے کے لیے  امتحان صرف اٹالین میں دیا جائے گا ۔ یہ امتحان تھیوری پر مبنی ہوتا ہے ۔ اب یہ امتحان انتہائی سخت کر دیا گیا ہے ۔ نئے امتحان میں 40 سوال ہونگے اور ان کا صرف ایک جواب ہوگا ۔ امتحان دینے والے کو بتانا ہوگا کہ اس سوال کا جواب صحیح ہے یا غلط ہے ۔ گزشتہ امتحان میں 10 سوال تھے اور انکے 3 جواب تھے ، ان میں سے صحیح تلاش کیا جاتا تھا ۔ یعنی پرانا امتحان انتہائی آسان تھا ۔ نئے امتحان میں پہلے 30 سوال ٹریفک میں احتیاط پر مبنی ہیں اور باقی 10 سوال مختلف سائن بورڈوں کے متعلق ہیں ۔ یاد رہے کہ ٹریفک کے اصول بدل جانے کے بعد امتحان بھی سخت کر دیا گیا ہے ۔ نئے امتحان میں آپ صرف 4 غلطیاں کر سکتے ہیں ۔ اگر آپ زیادہ غلطیاں کریں گے تو آپ کو امتحان دوبارہ دینا ہوگا ۔ غیر ملکیوں کے لیے ایک اور غمگین خبر یہ ہے کہ نیا امتحان مختلف زبانوں میں نہیں ہوگا ۔ اس سے قبل غیر ملکیوں کی مختلف زبانوں میں اس امتحان کو دیا جا سکتا تھا ۔ اب یہ امتحان صرف اٹالین فرنچ اور جرمن میں ہوگا ۔ جرمن کیونکہ آلتو آدیجے کی زبان ہے اور فرنچ کیونکہ وال دا اوستا کی زبان ہے ۔ اٹلی کی وزارت ٹرانسپورٹ نے کہا ہے کہ غیر ملکیوں کے ترجمے کافی مہنگے پڑتے تھے اور کئی بار یہ ترجمے غلط بھی ہوتے تھے ۔ اس کے علاوہ غیر ملکیوں کے لیے ضروری ہے کہ وہ اٹالین زبان میں امتحان دیں کیونکہ تمام سائن بورڈ اٹالین زبان میں موجود ہیں ۔ اٹلی کے نسل پرستی کے خلاف دفتر UNARنے ایک خط کے زریعے وزارت داخلہ سے اس غیر امتیازی سلوک کے بارے میں معلومات حاصل کرنے کی کوشش کی ہے لیکن لگتا ہے کہ وزارت اپنا فیصلہ واپس نہیں لے گی ۔ تحریر، ایلویو پاسکا ۔

Joomla Templates and Joomla Extensions by ZooTemplate.Com

آخری تازہ کاری بوقت اتوار, 07 اپریل 2013 13:55