Sunday, Apr 30th

Last update08:57:59 PM GMT

RSS

کولف یا ڈومیسٹک کام کرنے والوں کے لیے ٹیکس جمع کروانے کی آخری تاریخ

وہ غیر ملکی جو کہ گھریلو کام یا کولف کا کام کرتے ہیں ان کے لیے ضروری ہے کہ یہ  اکتوبر، نومبر، دسمبر 2012 تک کی ٹیکسوں کی قسط 10 جنوری 2013 تک جمع کرواد یں  ۔ وہ لوگ جو کہ وقت پر قسط جمع نہیں کروائیں گے ، انہیں چالان کے ساتھ قسط جمع کروانی ہو گی  ۔ان ورکروں میں وہ ملازم بھی شامل ہیں جو کہ بوڑھے لوگوں کی دیکھبال کرتے ہیں اور انہیں بدانتے کہا جاتا ہے ۔ یاد رہے کہ انپس کا یہ ٹیکس ہر تین ماہ بعد جمع کروایا جاتا ہے ۔ انپس کی یہ قسط ایک پرچی یا bollettinoکے زریعے جمع کروائی جاتی ہے اور یہ انپس والے کام کے مالک کے پتے پر روانہ کر دیتے ہیں ۔ اگر آپ کے مالک نے یہ پرچیاں حاصل نہیں کیں تو آپ انپس کے دفتر میں جاکر انہیں حاصل کر سکتے ہیں ۔اگر آپ ٹیلی فون کے زریعے حاصل کرنا چاہتے ہیں تو اس فون کا نمبر 803164ہے ۔ انٹرنیٹ کے زریعے حاصل کرنے کے لیے آپ کو www.inps.it  کی سائٹ کھولنی ہو گی ۔ اب یہ قسط تباکیریا یا tabaccheriaسے بھی جمع کروائی جا سکتی ہے بشرطیکہ اس کے پاس اجازت نامہ ہو ۔ ڈومیسٹک کام کے ملازمین کے لیے انپس کی قسط ان کی تنخواہ اور کام کے اوقات سے اخذ کی جاتی ہے ۔ اگر آپ ہفتے میں چوبیس گھنٹے کام کرتے ہیں تو اس صورت میں قسط کو اوقات کے مطابق تین حصوں میں تقسیم کیا گیا ہے لیکن اگر آپ ہفتے میں چوبیس گھنٹوں سے زیادہ ( پچیس گھنٹے کام کرتے ہیں ) تو اس صورت میں انپس کی قسط فکس کر دی گئی ہے چاہے اور اس میں تنخواہ مختلف ہو سکتی ہے ۔ یعنی اس کی قسط تہہ کرتے وقت تنخواہ کو مدنظر نہیں رکھا جاتا ۔ پچیس گھنٹے والے کنٹریکٹ میں انپس کے ٹیکس کم پڑتے ہیں ۔ لیکن اس میں شرط یہ ہے کہ یہ تمام پچیس گھنٹے ایک ہی کام کے مالک کے پاس کام کرتے ہوئے پورے کیے گئے ہوں ۔ یاد رہے کہ کام کا مالک انپس کی تمام تر رقم جمع کروائے گا ۔ اس میں وہ رقم بھی موجود ہو گی جو کہ ملازم کے کھاتے میں پڑتی ہے ۔ یہ رقم بوستہ پاگا یا پے سلپ کے زریعے بعد میں کاٹ لی جائے گی ۔ مندرجہ زیل ٹیبل میں گھنٹوں کی تنخواہ کے مطابق انپس کی قسط تہہ کی گئی ہے جو کہ ہر تین ماہ بعد جمع کروائی جاتی ہے ۔ CAUFکے بغیر والا کوٹہ اس صورت میں لاگو ہو تا ہے جب ملازم کام کے مالک کا رشتہ دار ہو ۔ کام کے مالک کی بیوی یا مرد ہو نے کی صورت میں یا پھر مالک کے تیسرے درجے تک رشتہ دار ہونے کی صورت میں یا کام کے مالک کے ساتھ شادی کے بغیر ازدواجی زندگی قائم رکھنے کی صورت میں کاؤف کے بغیر انپس جمع کروایا جاتا ہے ۔

 

 

Retribuzione effettiva oraria

Importo contributo orario

 

con quota assegni familiari

senza quota assegni familiari

Fino a euro 7,54

€ 1,40 (0,34)*

€ 1,41 (0,34)**

Oltre € 7,54 e fino a € 9,19

€ 1,58 (0,38)*

€ 1,59 (0,38)**

Oltre € 9,19

€ 1,93 (0,46)*

€ 1,94 (0,46)**

Lavoro superiore a 24 ore settimanali***

€ 1,02 (0,24)*

€ 1,02 (0,24)**

دائرے کے اندر والا کوٹہ ملازم جمع کروائے گا ، جس پرسٹار کا نشان ہے  *

 

Joomla Templates and Joomla Extensions by ZooTemplate.Com

تیرہویں تنخواہ ہر ملازم کا حق ہے

دسمبر کے مہینے میں ماہانہ تنخواہ کے علاوہ ایک تیرھویں تنخواہ دی جاتی ہے ۔ یہ تنخواہ ہر ملازم حاصل کرتا ہے ۔ اسے tredicesima mensilitàکہتے ہیں ۔ دسمبر کا مہینہ ملازموں کے لیے خوشی کا مہینہ ہوتا ہے کیونکہ اس مہینے میں معمول کی تنخواہ کے علاوہ ایک اور مزید تنخواہ دی جاتی ہے ۔ تیرھویں تنخواہ دوسری تنخواہوں کی طرح ہوتی ہے اور یہ صرف ملازمین یا ورکروں کو دی جاتی ہے ، یعنی بزنس کرنے والے یہ تنخواہ حاصل نہیں کر سکتے ۔ تیرھویں تنخواہ کا حق 1937 میں صرف انڈسٹری میں کام کرنے والے ملازمین یا ورکروں کو دیا گیا تھا ۔ اسکے بعد 1946 میں اسے عام ملازمین پر بھی اسکا حق جاری کر دیا گیا تھا ۔ 1960 میں صدر کے ایک قانون کے مطابق تیرھویں تنخواہ کو ضروری قرار دے دیا گیا تھا ۔ اس قانون کا نمبر 1070 ہے ۔ تیرھویں تنخواہ کا حق ہمیشہ کے کنٹریکٹ والے ملازمین کے علاوہ مقررہ مدت کے کنٹریکٹ والوں کے لیے بھی مختص کیا گیا ہے ۔ تیرھویں تنخواہ سال کے ہر مہینے میں جمع ہوتی رہتی ہے ، یعنی یکم جنوری سے لیکر 31 دسمبر تک کے عرصے میں ایک تیرھویں تنخواہ مکمل ہوجاتی ہے ۔ تیرھویں تنخواہ سال میں ایک بار دی جاتی ہے اور اسکا مقصد کرسمس کا تہوار ہے ۔ کرسمس کے تہواروں کے دوران ملازم کے پاس کچھ رقم زیادہ ہونے کیوجہ سے اسکی خوشیاں مزید سوہانی ہوجاتی ہیں ۔ تیرھویں تنخواہ کا حساب سال کے دوران کام کرنے سے مختص کیا جاتا ہے ۔ عام کنٹریکٹ کے مطابق بنیادی تنخواہ کی بنا پر تیرھویں تنخواہ کی رقم کا حساب لگایا جاتا ہے ۔ تیرھویں تنخواہ کا حساب لگانے کے لیے آپ کو اپنا آخری بوستا پاگا یا پے سلپ دیکھنی ہوگی ۔ آخری بوستا پاگا کی بنیادی تنخواہ کے مطابق تیرھویں تنخواہ نکلے گی ۔ اگر ملازم نے پورا سال کام کیا ہے تو اسے تیرھویں تنخواہ مکمل طور پر دی جائے گی اور اگر ملازم نے سال کے دوران کسی مہینے میں کام شروع کیا ہے تو اسکی تیرھویں تنخواہ اسی مہینے سے شروع کی جائے گی ۔ یعنی اگر ملازم نے مارچ کے مہینے میں کام شروع کیا ہے تو دسمبر میں اسے مارچ کے مہینے سے لیکر دسمبر کے مہینے تک یعنی 10 مہینوں کی تیرھویں تنخواہ جاری کی جائے گی ۔ مہینے کا تعین 15 دن گزر جانے کے بعد کیا جاتا ہے ۔ اگر ملازم نے 16 مارچ کو کام شروع کیا تھا تو اس صورت میں مارچ کا مہینہ بھی شمار کیا جائے گا 15 کم ہونے کی صورت میں اس مہینے کو شمار نہیں کیا جائے گا ۔ پارٹ ٹائم کنٹریکٹ والے تیرھویں تنخواہ فل ٹائم والوں کی نسبت  آدھی حاصل کریں گے ۔ اگر ایک پارٹ ٹائم والا ہفتے میں 20 گھنٹے کام کرتا ہے تو اسے 20 گھنٹوں کے حساب سے تیرھویں تنخواہ دی جائے گی ۔ فل ٹائم یا 40 گھنٹے کام کرنے والے ملازم کو اسکے گھنٹوں کے حساب سے پوری تیرھویں تنخواہ دی جائے گی ۔ اگر ملازم سال کے دوران اپنا کنٹریکٹ تبدیل کروا لیتا ہے ، یعنی پارٹ ٹائم سے فل ٹائم کروا لیتا ہے یا پھر فل ٹائم سے پارٹ ٹائم کروا لیتا ہے تو اسکی تیرھویں تنخواہ کا حساب اسکے گھنٹوں اور مختلف مدت میں  کام کرنے  سے نکال لیا جائے گا ۔ تیرھویں تنخواہ کا حساب سال میں کام کرنے کے حوالے سے نکالا جاتا ہے ، اگر ملازم کام نہ کرے تو اسکا حق تیرھویں تنخواہ پر نہیں ہوتا لیکن بعض مواقعوں کے مطابق کام نہ کرنے پر بھی ملازم تیرھویں تنخواہ حاصل کر سکتا ہے ۔ اگر ملازم مختلف وجوہات کی بنا پر کام پر نہیں گیا تو اس صورت میں بھی اسکا حق تیرھویں تنخواہ پر ہوتا ہے ۔ شادی کے لیے 15 کی چھٹیاں حاصل کرنے پر تیرھویں تنخواہ کا حق برقرار رہتا ہے ۔ کام پر چوٹ لگنے کی صورت میں اور بیمار ہونے کی صورت میں تیرھویں تنخواہ کا حق برقرار رہتا ہے ۔ عام چھٹیوں کے دوران اور کام سے گھنٹوں کی صورت میں اجازت حاصل کرنے کے دوران تیرھویں تنخواہ کا حق برقرار رہتا ہے ۔ عورت ملازم حاملہ ہونے کے دوران بچہ پیدا ہونے سے قبل 2 مہینے اور بچہ پیدا ہونے کے بعد3 ماہ تک کام سے غیر حاضر رہ سکتی ہے ۔ اسکے علاوہ بچے کو دودہ پلانے اور دوسرے مسائل کے لیے دنوں کی چھٹیاں حاصل کرسکتی ہے ۔ اس تمام عرصے میں کام سے غیر حاضر ہونے کے باوجود تیرھویں تنخواہ کا حق برقرار رہتا ہے ۔ اگر ملازم بیماری اور کام پر چوٹ لگنے کی صورت میں کنٹریکٹ کے مطابق زیادہ مدت تک کام پر نہیں گیا تو اس صورت میں تیرھویں تنخواہ کا حق برقرار نہیں رہتا ۔ قومی کنٹریکٹ میں بیماری اور کام پر چوٹ لگنے کی مدت کا عرصہ تہہ پایا گیا ہے ۔ اگر ملازم اس مدت سے زیادہ گھر پر رہے تو اسکا تیرھویں تنخواہ کا حق ختم ہوجاتا ہے ۔ بعض اوقات ملازمین اپنی چھٹی کے علاوہ بغیر تنخواہ کی چھٹی یا پرمیشن حاصل کرتے ہیں ، اس صورت میں اس غیر حاضری کے عرصے کو تیرھویں تنخواہ میں شامل نہیں کیا جائے گا ۔ ہڑتال کرنا ، حاملہ ہونے کی صورت میں اپنے حق کی چھٹیوں کے علاوہ چھٹیاں کرنا، ملٹری سروس کے لیے چھٹیاں حاصل کرنا ، ان تمام صورتوں میں تیرھویں تنخواہ کا حق غیر حاضری والی مدت میں نہیں دیا جاتا ۔ تیرھویں تنخواہ حاصل کرنے کی صورت میں بھی ٹیکس دیے جاتے ہیں ۔ تیرھویں تنخواہ کے ٹیکس اسکے بوستا پاگا سے حاصل کیے جاتے ہیں، انکا تعلق دسبمر کی تنخواہ سے ہرگز نہیں ہوتا ۔ پنشن شدہ افراد بھی تیرھویں تنخواہ حاصل کرتے ہیں ۔ اگر ایک ضعیف بندہ یا عورت سال کے کسی حصے میں مر جاتا ہے تو اس صورت میں مرنے والے کے لواحقین اسکی تیرھویں تنخواہ حاصل کرسکتے ہیں ۔ کولف ملازمین بھی دوسرے ملازمین کی طرح تیرھویں تنخواہ حاصل کرتے ہیں ۔ اگر کولف ملازمین کسی کام کے مالک کے پاس چند گھنٹے کام کرتے ہیں اور یا پھر کسی مالک کے پاس پورا دن کام کرتے ہیں ، دونوں صورتوں میں تیرھویں تنخواہ کا حق برقرار رہتا ہے ۔ کولف کو تیرھویں تنخواہ دینے کے لیے بہت آسان طریقہ ہے ، یعنی اسکی دسمبر کی تنخواہ کے مطابق اسے تیرھویں تنخواہ دی جائے گی ۔ اگر کولف ملازم گھنٹوں کے حساب سے کسی مالک کے پاس کام کرتا ہے تو اس صورت میں اسکے گھنٹے جمع کر لیے جائيں گے اور انکا حساب 52 ہفتوں کے حساب سے نکال لیا جائے گا ۔ 52 ہفتوں کو مہینوں میں تقسیم کرتے ہوئے ہر مہینے کا تیرھویں تنخواہ کا حساب نکل آئے گا ۔ کولف ملازمین بھی سال کے دوران کام کرنے کی صورت میں تیرھویں تنخواہ حاصل کریں گے ۔ اگر کولف ملازم مختلف مالکان کے پاس کام کرتا ہے تو اس صورت میں تمام مالکان اسکے گھنٹوں کے حساب سے اسے تیرھویں تنخواہ حاری کریں گے ۔ اگر کولف ملازم ایک مہینے میں چند گھنٹے کام کرتا ہے تو دوسرے مہینے میں پچھلے مہینے کی نسبت زیادہ یا کم گھنٹے کام کرتا ہے تو اس صورت میں اسکے مہینوں میں کام کرنے کی صورت پر تیرھویں تنخواہ کی رقم مقرر کی جائے گی ۔

Joomla Templates and Joomla Extensions by ZooTemplate.Com

نیا منی کوٹہ جاری کردیا گیا

روم۔ 23 نومبر 2012 ۔۔۔ اٹلی کی موجودہ حکومت نے نیا منی کوٹہ جاری کردیا ہے ۔ اس کوٹے میں 13 ہزار 850 غیر ملکیوں کو ورک پرمٹ یا پرمیسو دی سوجورنو جاری کی جائے گی ۔ یہ تمام کوٹے اٹلی میں موجود غیر ملکیوں کی پرمیسو دی سوجورنو کو تبدیل کرنے کے لیے استعمال کیے جائیں گے ۔ صرف 100 کا کوٹہ ان غیر ملکیوں کے لیے رکھا گیا ہے جو کہ جنوبی امریکہ میں آباد ہیں اور انکے آبا‎ؤ اجداد اٹالین تھے ۔ ملازمت کے کوٹے بالکل جاری نہیں کیے جائیں گے ۔ کوٹوں میں وہ بزنس مین شامل ہیں جو کہ اٹلی کی معیشت کو بہتر بنانے کے لیے پبلک اور پرائیویٹ فرموں کے ساتھ کام کرتے ہیں اور انکے پاس بزنس کی سوجورنو موجود نہیں ہے ، اس کے علاوہ وہ آرٹسٹ جو کہ بین الاقوامی طور پر مشہور ہیں اور اٹلی میں اپنے فن کو بہتر بنانے کے لیے تشریف لانا چاہتے ہیں ۔ 100 سوجورنو ان اٹالین کو جاری کی جائے گی جو کہ تیسری نسل تک اٹالین آباؤاجداد رکھتے ہیں ، انہیں ملازمت اور بزنس دونوں کی سوجورنو جاری کی جائے گی ۔ یہ لوگ دنیا کے ممالک ارجنٹائن، یوروگوائی، وینسؤلا اور برازیل میں آباد ہیں اور اٹلی میں کام کرنے کے خواہشمند ہیں ۔ منی کوٹے سے 4000 کا کوٹہ ان غیر ملکیوں کے لیے مختص کیا گیا ہے جو کہ اٹلی میں موسمی ملازمین کی پرمیسو دی سوجورنو سے موجود ہیں ۔ 6000 کا کوٹہ ان غیر ملکیوں کے لیے مختص کیا گیا ہے جو کہ اٹلی میں تعلیم حاصل کرنے کے لیے ، ٹریننگ کے لیے یا پھر پروفیشنل تعلیم کے لیے تشریف لائے تھے ۔ 500 کا کوٹہ ان غیر ملکیوں کے لیے مختص کیا گیا ہے جو کہ اٹلی میں موجود ہیں اور انکو کسی دوسرے یورپین ملک کی طرف سے کارتا دی سوجورنو یا لمبی مدت کی سوجورنو جاری کی جانی ہے ۔ منی کوٹے سے 1000 سوجورنو کو بزنس کی سوجورنو میں تعلیم کی سوجورنو، ٹریننگ کی سوجورنو یا پروفیشنل تعلیم کی سوجورنو سے تبدیل کیا جانا ہے ۔ اس کوٹے کو اٹلی کے تمام صوبوں میں وزارت روزگار کی طرف سے تقسیم کیا جائے گا اور تقسیم کے دوران درخواستوں کو مدنظر رکھا جائے گا ۔ اس کوٹے میں حصہ لینے کے لیے غیر ملکی انٹرنیٹ کے زریعے درخواست دیں گے ۔ یہ کوٹے 7 دسمبر 2012 سے صبح 00۔9 بجے شروع ہونگے ۔ درخواست دینے کے لیے آپ کو اس سائٹ سے رجوع کرنا ہوگا ۔ سائٹ کو کھولنے کے لیے سائٹ پر کلک کریں ۔ 

 https://nullaostalavoro.interno.it

 

Joomla Templates and Joomla Extensions by ZooTemplate.Com

آخری تازہ کاری بوقت جمعہ, 23 نومبر 2012 21:05

امیگریشن کے بعد درخواستوں کا جواب آنا شروع

روم۔ 29 اکتوبر 2012 ۔۔۔ اٹلی کی وزارت داخلہ نے امیگریشن کی درخواستیں حاصل کرنے کے بعد پریفی تورا کے دفتر Sportello Unicoیا متحدہ دفتر میں روانہ کردیں ہیں ، اب متحدہ دفتر والے ان درخواستوں کے بارے میں متعلقہ تھانے اور روزگار کے دفتر سے رائے حاصل کریں گے ۔ اگر ان درخواستوں پر ان دفاتر نے کوئی اعتراض نہ لگایا تو اس صورت میں متحدہ دفتر والے مالک اور غیر ملکی ملازم کو بلاتے ہوئے ان سے سوجورنو کا کنٹریکٹ کریں گے ۔ اپنی درخواست کے بارے میں جاننے کے لیے آپ کو وزارت داخلہ کی انٹرنیٹ کی سائٹ میں جانا ہوگا اور یہاں کلک کرنی ہوگی ۔

اسکے بعد اس سائٹ میں آپکو اپنا ای میل ایڈریس یا کوڈ اور پاس ورڈ دینا ہوگا جو کہ آپ نے درخواست روانہ کرتے وقت استعمال کیا تھا ۔ جس خانے میں آپ نے ایڈریس اور کوڈ ڈالنا ہے اسکی تصویر یوں ہے ۔

Joomla Templates and Joomla Extensions by ZooTemplate.Com

پاکستانی کو دوبارہ ملک بدری کا نوٹس

altروم۔ 16 اکتوبر 2012 ۔۔۔ اٹلی کے شہر فرارا میں ایک پاکستانی کو ملک بدری کا دوبارہ نوٹس اس لیے جاری کیا گیا ہے کیونکہ اسے بلونیا شہر کی پولیس نے جعلی کام کرنے اور اسٹیٹ کے ساتھ فراڈ کرنے کے جرم میں ملک بدر کردیا تھا ۔ اس پاکستانی کی عمر 33 سال ہے اور اسے جب ملک بدر کیا گیا تھا تو یہ اسکے بعد اسلام آباد کی اٹالین ایمبیسی سے ویزہ حاصل کرتے ہوئے دوبارہ اٹلی میں داخل ہو گیا تھا ۔ اس نے ایمبیسی کے حکام کو یہ نہیں بتایا تھا کہ وہ اٹلی سے ملک بدر ہوچکا ہے ۔ خیر یہ پاکستانی دوبارہ ویزہ حاصل کرتے ہوئے اٹلی آگیا اور اس نے فرارا شہر کی امیگریشن پولیس سے اپنی سوجورنو حاصل کرنے کے لیے درخواست دیدی ۔ پولیس نے جب چھان بین کی تو پتا چلا کہ اس پاکستانی نے قانون شکنی کی ہے ۔ اس پاکستانی کا حق تھا کہ یہ دوبارہ ویزہ حاصل کرنے کے لیے وزارت داخلہ کی اجازت حاصل کرتا ۔ قانون کے مطابق جس غیر ملکی کو ملک بدر کیا جاتا ہے ، اسے 10 سال کے لیے اٹلی میں دوبارہ داخل ہونے کی اجازت نہیں ہوتی لیکن اس پاکستانی نے کسی دوسرے نام سے داخل ہوکر دوبارہ اٹلی میں سکونت اختیار کرنے کی کوشش کی ۔

Joomla Templates and Joomla Extensions by ZooTemplate.Com