Monday, Jul 15th

Last update12:39:09 AM GMT

RSS

لومبردیا میں سید ریاص کو ووٹ دیکر کامیاب بنائیں

روم۔ 3 فروری 2013 ۔۔۔ پیارے قارئین اٹلی میں الکیشن کی آمد ہے اور اس موقع پر ہمارے ایک پیارے جوان سید ریاص لومبردیا کے انتخابات میں کونصلر کی سیٹ کے لیے الکیشن لڑ رہے ہیں ۔ سید ریاص اٹلی کی مشہور سماجی شخصیت سید تنویر شاہ کے صاحبزادے ہیں اور منہاج القرآن یورپ کے صدر سید ارشد شاہ کے کزن ہیں ۔ سید ریاص 1984 میں پاکستان میں پیدا ہوئے اور اسکے بعد والدین کے ساتھ میلانو میں آباد ہوگئے ۔ انہوں نے میلانو سے تمام تر تعلیم حاصل کی اور یونیورسٹی سے قانون کی تعلیم حاصل کرنے کے بعد وکالت کے شعبے سے منسلک ہو گئے ۔ سیدریاص اپنی سیاسی سرگرمیوں کے ساتھ ساتھ کمونٹی سے بھی محبت کرتے ہیں اور پاکستانیوں کے مسائل حل کرنے کے لیے اپنی قانونی خدمات استعمال کرتے ہیں ۔ انہوں نے آزاد کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ اٹلی میں یہ پہلا موقع ہے کہ ایک پاکستانی ریجنل لیول کے الکیشن میں حصہ لیتے ہوئے پاکستان کا نام روشن کررہا ہے ۔ سید ریاص اٹلی میں مسلمانوں اور غیر ملکیوں کے حقوق کے لیے بھی جنگ لڑ رہے ہیں اور ان کا سب سے بڑا نعرہ غیر ملکیوں کے بچوں کو پیدائش کے فوری بعد اٹالین شہریت دلوانا ہے ۔ سید ریاص اٹلی میں امیگریشن کے قوانین کو مثبت بنانے کے لیے بھی کاروائیاں کر رہے ہیں اور انکی کاوشوں سے سول سروس کے قانون کوبھی تبدیل کیا جا رہا ہے ۔ سید ریاص الکیشن سے قبل اپنی سیاسی اور سماجی سرگرمیوں کی بدولت نام کما چکے ہیں ۔ تمام کمونٹی کے خواتین و حضرات سے اپیل کی جاتی ہے کہ وہ لومبردیا میں الکیشن لڑنے والے اس جوان کی مدد کریں ۔ ووٹ ڈالنے کے لیے ضروری ہے کہ آپ میلانو یا اس کے صوبے میں آباد ہوں اور آپ کے پاس اٹالین شہریت موجود ہو ، اسکے بعد آپ کو الکیشن کمیشن سے ایک کارڈ حاصل کرنا ہو گا اور ووٹ ڈالنا ہو گا ۔ ووٹ ڈالتے وقت آپ پارٹی PDپر کراس ڈالیں گے اور اسکے بعد ساتھ ہی Reas Syedکا نام درج کریں گے ۔ یاد رہے کہ وہ پاکستانی جو کہ ووٹ نہیں ڈالتے کیونکہ انکے پاس اٹالین شہریت نہیں ہے ، یا پھر وہ ہم وطن جو کہ دوسرے علاقوں میں آباد ہیں ، ان سے گزارش ہے کہ یہ اپنے جاننے والوں سے رابطہ کریں ، جو کہ لومبردیا میں آباد ہیں اور سیدریاص کی کمپین میں حصہ لیں ۔

سید ریاص سے رابطہ کرنے کے لیے انکی سائٹ www.reassyed.com کا پر کلک کریں

Joomla Templates and Joomla Extensions by ZooTemplate.Com

گواستالہ میں عید میلادالنبی کا جشن

ریجو ایملیا ، مسعود شیرازی سے ۔۔۔۔ اٹلی کے شمالی علاقے ریجو ایمیلیا کے قصبے گواستالہ میں حضور پر نور، حبیب خدا، ختم ارسل ۖ کی ولادت با سعادت کی خوشی میں محفل میلاد منائی گئی ۔ جس میں تلاوت کلام کریم اور حضور ۖ کے لیے نذرانہ پیش کیا گیا ۔ خصوصی بیان کے لیے برطانیہ سے جناب علامہ ظفر محمود( خطیب و عالم امہ چینل انگلینڈ ) تشریف لائے ۔ جنہوں نے علمی و تحقیقی تقریر سے حاضرین محفل کے دینی و مذہبی قلب کو گرمایا ۔ انہوں نے کہا کہ حضور ۖ نہ صرف انسانوں کے لیے بلکہ دوسری مخلوقات کے لیے بھی رحمت بن کر آئے تھے ، حتی کہ جانور اور پتھر بھی آپ سے اپنے مالکان کے مظالم اور سلوک کا زکر کرتے نظر آتے ہیں ۔ علامہ صاحب نے غیر مسلم دنیا میں آباد مسلمانوں اور بالخصوص پاکستانیوں کو یہ نصیحت کی ، کہ آپ لوگ اپنے نبی کریم ۖ کی زندگی کا مطالعہ کرتے ہوئے پردیس میں محبت و امن کے عالمی پیغام کے ساتھ غیر مسلموں کے ساتھ حسن سلوک سے پیش آئيں اور کوئی ایسا عمل نہ کریں ، جس سے اسلام اور پاکستان کے حوالے سے کوئی منفی سوچ پیدا ہو۔ محفل کے کامیاب انعقاد پر پاک محمدیہ اسلامک سنٹر گواستالہ کے امام علامہ فاروق اور کمیٹی انتظامیہ ، ڈاکٹر محمد اظہر، محمد مظفر، عمر فاروق، محمد حنیف، محمد جاوید، خادم حسین اور دیگر حاضرین محفل کو مبارکباد پیش کی ۔ محفل کے اختتام پر لنگر تقسیم کیا گیا ۔

Joomla Templates and Joomla Extensions by ZooTemplate.Com

ضروری اعلان

پیارے قارئین ، وہ تارکین وطن اور پیارے پاکستانی جو کہ اٹلی میں آباد ہیں اور آزاد اخبار پیپر یا کاغذ پر چھپا ہوا پڑھتے ہیں ، ان سے التماس کی جاتی ہے کہ موجودہ معاشی بحران کیوجہ سے آزاد کی پبلسٹی کم ہو گئی ہے ، اس لیے کچھ عرصہ کے لیے ہمیں آزاد ماہانہ بند کرنا پڑ رہا ہے ۔ آزاد 12 سال سے زیادہ عرصے سے اٹلی میں شائع ہو رہا ہے اور تارکین وطن کو خبریں، قوانین اور دوسری معلومات فراہم کرتے ہوئے انکی خدمت کررہا ہے ۔ اب آزاد صرف انٹرنیٹ کے زریعے اپنے قارئین سے منسلک رہے گا اور جونہی پبلسٹی آئے گی تو کاغذ پر بھی چھپا آزاد آپکے گھر، دکان اور دفتر میں پہنچ جائے گا ، آپکا خدمتگار ایڈیٹر آزاد اعجاز احمد

Joomla Templates and Joomla Extensions by ZooTemplate.Com

سابقہ منگیتر کا گلہ گھونٹنے کے جرم میں محمد بشیر گرفتار

روم۔ 22 جنوری 2013   ۔۔۔ اٹلی کے شہر سینیگالیہ میں ایک پاکستانی محمد بشیر کو سابقہ منگیتر کا گلہ گھونٹنے کے جرم میں گرفتار کرلیا گیا ہے ۔ پولیس کی رپورٹ کے مطابق محمد بشیر عمر 55 سال سینیگالیہ میں پرمیسو دی سوجورنو کے ساتھ آباد ہے اور راج مزدوری کا کام کرتا ہے ۔ اس نے یوکرائن کی ایک عورت عمر 47 سال نام ایس ایل کے ساتھ منگیتر کا رشتہ قائم کررکھا تھا ۔ کچھ عرصہ قبل یوکرائن کی عورت نے محمد بشیرکے ساتھ اس لیے  رشتہ ختم کردیا تھا کیونکہ وہ شراب کے نشے میں اسے مارتا پیٹتا ہے ۔ محمد بشیر نے اس علیحدگی کو تسلیم نہ کیا اور کل اس نے عورت کا پیچھا کرنا شروع کردیا ۔ یہ عورت جب شام کو اپنے کام سے نکلی اور اس نے اپنے سائیکل پر گھر واپس جانا چاہا تو اسے پتا چلا کہ کسی نے اسکے سائیکل کو تالہ لگا دیا ہے ۔ عورت کو سمجھ لگ گئی کہ یہ کام اسکے سابقہ منگیتر نے کیا ہے ، اسکے بعد عورت نے تیزی سے راستہ بدلتے ہوئے اپنے گھر واپس جانا شروع کیا۔ اسی اثنا میں اسکے پیچھے سے محمد بشیر شراب کے نشے میں آگیا اور اس نے عورت کو مارنا پیٹنا شروع کردیا اور اسکے بعد اسکے پرس کی چین سے اسکا گلہ گھونٹنا شروع کردیا ۔ عورت کی چیخ و پکار سے ایک راہ گزر بھی وہیں آگیا اور اس نے فوری طور پر پولیس کو فون کردیا ۔ پولیس جب اس جگہ پر پہنچی تو محمد بشیر نے انکی بھی کوئی پرواہ نہ کی اور عورت کو مارتا رہا اور اسکے گلے کو دبانے کی کوشش کرتا رہا ۔ بڑی مشکل سے پولیس عورت کو آزاد کروانے میں کامیاب ہوگئی ۔ دونوں کو پولیس اسٹیشن لایا گیا اور مرہم پٹی کی گئی ۔ انکونا کی عدالت نے محمد بشیر پر ارادہ قتل اور پولیس پر ہاتھ اٹھانے کا کیس کردیا ہے اور اسے جیل میں بند کردیا گیا ہے ۔ تصویر میں محمد بشیر پولیس کی حراست کے دوران 

Joomla Templates and Joomla Extensions by ZooTemplate.Com

آخری تازہ کاری بوقت منگل, 22 جنوری 2013 21:22

ریذیڈنس کے لیے رجسٹریشن کا تعلق گھر کی حالت سے منسلک نہیں ، اسٹیٹ کونصل

روم ۔ 22 جنوری 2013 ۔۔۔ اٹلی کی حکومت کی اسٹیٹ کونصل نے حکم جاری کیا ہے کہ غیر ملکیوں کے ریذیڈنس کے لیے کمونے میں  رجسٹریشن کا تعلق گھر کی حالت سے منسلک نہیں ہے ۔ یاد رہے کہ سابقہ برلسکونی کی حکومت نے سیکورٹی کا قانون legge sulla sicurezza 94/2009بنایا تھا ، جس کے مطابق غیر ملکیوں کے لیے ضروری قرار دیدیا گیا تھا کہ وہ ریذیڈنس بنانے کے لیے یا اسے بدلنے کے لیے اپنی رہائش کی چیکنگ کروائیں اور اس سلسلے میں ان کے گھر کا معائنہ کیا جاتا تھا اور یہ دیکھا جاتا تھا ، اگر ان کا گھر قانون کے مطابق تعمیر ہوا ہے ، ہوادار ہے اور اسکی حالت خستہ نہیں ہے ۔ یعنی انہیں condizioni igienico-sanitarieیعنی صاف ستھرا اور پائیدار گھر ہونے کا سرٹیفیکٹ مہیا کرنا ہوتا تھا ۔ اٹلی کی حکومت نے ایک حکم کے زریعے تمام پریفی تورا کو یہ واضع کردیا ہے کہ وہ غیر ملکیوں کے ریذیڈنس کے لیے انہیں اس سرٹیفیکٹ کی موجودگی نہ پوچھیں ۔ اسکے علاوہ تمام کمونوں کو بھی یہ واضع کردیا گیا ہے کہ وہ غیر ملکیوں کو اناگرافے میں ریذیڈنس اپلائی کرنے کے لیے ان کے گھر کا کنٹرول نہ کریں کیونکہ یہ ہمارے آئین کے آرٹیکل 3 کے خلاف ہے ۔ عام طور پر شمالی اٹلی میں جہاں لیگا نورد پارٹی کے میئر موجود ہیں ، وہاں جب غیر ملکی ریذیڈنس کے لیے رجسٹریشن کروانے جاتے تھے تو ان کے گھر کا کنٹرول کیا جاتا تھا ۔ لیگا نورد غیر ملکیوں کی دشمن سیاسی جماعت ہے اور اس قانون کیوجہ سے لیگا کے میئر غیر ملکیوں کا اناگرافے میں اندراج روکتے ہوئے انہیں تنگ کرنے کی کوشش کرتے تھے ۔ اب حکام نے اعلان کیا ہے کہ ایسے قانون سے امتیازی سلوک کو ہوا ملتی ہے کیونکہ یہ کنٹرول صرف غیر ملکیوں کے گھروں کا ہوتا تھا اور اٹالین پر عائد نہیں کیا جاتا تھا ۔ گھر کا صاف ستھرا ہونا، اسکی حالت اچھی ہونی اور اسے قانون کے مطابق ہونے کا تعلق ریذیڈنس سے نہیں ہے ۔ یہ قانون اٹلی میں رہنے والے تمام شہریوں کے لیے بنا ہوا ہے ، یعنی اٹالین اور امیگرنٹس کے لیے ۔ اگر کوئی گھر یا پلازا خستہ حالت کا ہے تو اسے کمونا بند کروا سکتا ہے یا پھر گرا سکتا ہے لیکن اس کا تعلق ریذیڈنس سے منسلک نہیں ہے ۔ غیر ملکی کسی گیراج، انڈر گراؤنڈ گھر، یا کسی دوسری جگہ پر رہتے ہوئے اپنا ریذیڈنس بنوا سکتا ہے کیونکہ وہ اس کا حق ہے اور ریذیڈنس اسے اٹلی میں رہنے کے لیے درکار ہوتا ہے ، اسکے بعد اگر اس کا گھر خطرناک ہے تو کمونا اس گھر چیک کرسکتا ہے ، جیسے اٹالین کاخستہ گھر چیک کیا جاتا ہے ۔ اس حکم کے بعد اب شمالی اٹلی کے نسل پرست میئر غیر ملکیوں کو ریذیڈنس کے لیے تنگ نہیں کریں گے ۔ گھر کاl’idoneità alloggiativaکا سرٹیفیکٹ بھی حلفیہ بیان کے زریعے پیش کیا سکتا ہے ۔

Joomla Templates and Joomla Extensions by ZooTemplate.Com

آخری تازہ کاری بوقت منگل, 22 جنوری 2013 09:32